پی ڈی ایم جلسے میں آئین سے ماورا تقاریر کی گئیں،وزیراعلیٰ کے عہدے کو گالی دی گئی ،ترجمان بلوچستان حکومت

پی ڈی ایم جلسے میں آئین سے ماورا تقاریر کی گئیں،وزیراعلیٰ کے عہدے کو گالی دی ...
پی ڈی ایم جلسے میں آئین سے ماورا تقاریر کی گئیں،وزیراعلیٰ کے عہدے کو گالی دی گئی ،ترجمان بلوچستان حکومت

  

کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی نے کہاہے کہ پی ڈی ایم جلسے کو مکمل سیکیورٹی فراہم کی گئی ،وزیراعلیٰ کاعہدہ آئینی ہے،اس عہدے کوکل گالی دی گئی ،پی ڈی ایم جلسے میں آئین سے ماوراتقاریرکی گئیں۔

ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ پی ڈی ایم جلسے کو مکمل سیکیورٹی فراہم کی گئی ،ہزارگنجی دھماکے کے ملزمان کوکیفرکردار تک پہنچائیں گے،سیکیورٹی اداروں کی کاوشیں قابل ستائش ہیں،عوام کے جان ومال کاتحفظ حکومت کی ذمہ داری ہے۔ترجمان بلوچستان حکومت نے کہاکہ وزیراعلیٰ کاعہدہ آئینی ہے،اس عہدے کوکل گالی دی گئی ،پی ڈی ایم جلسے میں آئین سے ماوراتقاریرکی گئیں۔ مریم نوازکی تقریرلعنت سے شروع ہوئی اورلعنت پرختم ہوئی،آپ پاناما اور اقامہ کیس پر نااہل ہوئے ، غصہ اتارنے بلوچستان آگئے ۔

انہوں نے کہاکہ ن لیگ یاپیپلزپارٹی نے ایک منصوبہ نہیں لگایا،بلوچستا ن کیلئے کسی بھی جماعت نے کوئی ترقیاتی کام نہیں کیا،بلوچستان کی محرومیوں کے ذمہ دارکل جلسے میں بیٹھے تھے،لیاقت شاہوانی نے کہاکہ 18 ویں ترمیم کے علاوہ بلوچستان کوکچھ نہیں دیاگیا،فضل الرحمان الیکشن ڈی آئی خان میں ہارے ،غصہ بلوچستان میں اتاررہے ہیں،پی ڈی ایم کے 90 فیصدقائدین سی پیک پر(ن) لیگ کیخلاف تھے، ایک دوسرے کیخلاف بولنے والے آج متحد ہوئے ہیں ،آپ مسترد لوگ ہیں اوربلوچستان میں طاقت کامظاہرہ کرنے آگئے،ایسی بھی جماعت ہے جس نے ایک صوبائی سیٹ جیتی ،اسے بھی چھوڑنے کوتیار نہیں۔ترجمان بلوچستان حکومت نے کہاکہ بلوچستان کے لوگوں نے پی ڈی ایم جلسے کوسنجیدہ نہیں لیا،عوام کی جانب سے مسترد عناصر احتجاجی سیاست کررہے ہیں۔

مزید :

قومی -علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -