”ہمیں نہیں بولنے دو گے تو تمہاری زبان بندی ہوگی“شاہ محمودقریشی کا اپوزیشن کو کرارہ جواب 

”ہمیں نہیں بولنے دو گے تو تمہاری زبان بندی ہوگی“شاہ محمودقریشی کا اپوزیشن ...
”ہمیں نہیں بولنے دو گے تو تمہاری زبان بندی ہوگی“شاہ محمودقریشی کا اپوزیشن کو کرارہ جواب 

  

اسلام آباد ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا ہے کہ اگر ہمیں نہیں بولنے دو گے تو تمہاری بھی زبان بندی ہوگی، ہم میں اتنی طاقت ہے کہ آپ کا ترکی بہ ترکی جواب دے سکیں۔ اتنے اہم ایشو پر اپوزیشن کا غیر سنجیدہ رویہ دیکھ کر دکھ ہوا۔وزیرخارجہ نے فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی اور مذمتی قرارداد بھی پیش کی۔ 

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے پارلیمنٹ کے سیشن میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فرانس میں حضورﷺکے گستاخانہ خاکوں کی اشاعت سے پوری مسلمہ امہ کا دل کو ٹھیس پہنچی، ہمیں اس معاملے پر تشویش ہے، گستاخی رسولﷺ کسی صورت بھی قبول نہیں کر سکتے،وزیرخارجہ نے قراردادپیش کی کہ پاکستان کا منتخب ایوان گستاخانہ خاکوں کی سختی سے مذمت کرتا ہے، یورپ میں اسلامو فوبیا کے رجحان میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، گستاخانہ خاکوں کی اشاعت اس کی واضح مثال ہے، پاکستان کو اس رجحان پر تشویش ہے غیر مسلم ممالک میں مقیم مسلمان شہریوں کے مذہبی جذبات کے تحفظ کیلئے قانون سازی کی جائے، او آئی سی 15 مارچ کو اسلامو فوبیا کے خلاف دن قرار دے۔

  انہوں نے کہا اپوزیشن کے رویہ کو دیکھ کر دکھ ہوا، آج اجلاس میں ایک اہم مقدس مسئلہ پر بحث ہورہی ہے لیکن اپوزیشن اس پر بھی سیاست کررہی ہے۔ وزیرخارجہ کی تقریرکے دوران شورشرابہ کرنے پر انہوں نے کہا کہ اگر ہمیں تقریر نہیں کرنے دیں گے تو ہم بھی جواب بندی کریں گے ہمیں بھی ترکی بہ ترکی جواب دینا آتا ہے۔ 

شاہ محمودقریشی نے کہا کہ اپوزیشن والے ہمیں فیٹف کا طعنہ دیتے ہیں لیکن کوئی ان سے پوچھے کہ ایف اے ٹی ایف میں ملک کو کس نے دھکیلا۔یہ لو گ پاکستان کو متنازعہ بنارہے ہیں، ان کے جلسے میں بلوچستان کی آزادی کے نعرے لگائے گئے جس پر ان کو شرم آنی چاہیے۔انہوںنے خواجہ آصف کو کہا کہ ان میں نریندرمودی کی روح حلول کر چکی ہے،ہندوستان کا بیانیہ ان کے خون میں شامل ہوگیا۔ سندھ پولیس ساتھ ملا کر ڈرامہ رچایاگیا، ان سے بلیک میل ہوکران کی چوری نہیں چھوڑ دیں گے۔

مزید :

قومی -الیکشن -قومی اسمبلی -