انسداددہشت گردی ایکٹ میں مزید تبدیلی ، بل ایوان بالا میں پیش

انسداددہشت گردی ایکٹ میں مزید تبدیلی ، بل ایوان بالا میں پیش
انسداددہشت گردی ایکٹ میں مزید تبدیلی ، بل ایوان بالا میں پیش

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) جماعت اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد نے انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 میں مزید ترمیم کا بل سینیٹ میں پیش کر دیا ہے۔حکومت کی جانب سے بل کی مخالفت کی گئی۔ رضا ربانی نے کہا کہ فیٹف سے نکلنے کے لیے حکومت نے آئین کی دھجیاں اڑادیں۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطابق ایوان بالا میں انسداددہشت گردی ایکٹ 1997میں مزید ترمیم کے لیے بل پیش کیا گیا ہے، بل جماعت اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد نے پیش کیا۔ حکومت کی جانب سے ترمیمی بل کی مخالفت کی گئی۔ وزیر مملکت پارلیمانی امور علی محمد خان نے کہا کہ فیٹف کی 27 میں سے 21 شرائط پوری کردی گئی ہیں۔

اس موقع پر پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر رضا ربانی نے کہا کہ فیٹف کی گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے حکومت نے آئین کی دھجیاں اڑا دیں۔ آخرمیں نتیجہ یہ نکلا کہ فروری تک گرے لسٹ میں ڈال دیا گیا۔جس پر جواب دیتے ہوئے علی محمد خان نے کہا کہ پاکستان فیٹف کی بلیک لسٹ میں پیپلزپارٹی کے دورمیں آیا، ہم معاملے کو سنجیدگی کے ساتھ حل کرنے کے قریب پہنچ چکے ہیں۔

بعد ازاں انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 میں مزید ترمیم کا بل ووٹنگ کے بعد متعلقہ کمیٹی کو بھجوا دیا گیا ہے۔

مزید :

الیکشن -قومی اسمبلی -علاقائی -اسلام آباد -