پنجاب حکومت نے نوے ہزار  ٹن چینی درآمد کر لی،حسا ن خاور

    پنجاب حکومت نے نوے ہزار  ٹن چینی درآمد کر لی،حسا ن خاور

  

لاہور(این این آئی) معاون خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب برائے اطلاعات و ترجمان حکومت پنجاب حسان خاور نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت کو نچلے طبقوں پر مہنگائی کے اثرات کا ادراک ہے اور اس سے نمٹنے کے لیے سردار عثمان بزدار کی قیادت میں حکومت اور چیف سیکرٹری پنجاب کی ہدایات پر انتظامیہ طے کردہ لائحہ عمل پر کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے جو گروہ آجکل احتجاج کر رہے ہیں ان کا مہنگائی سے کوئی تعلق نہیں۔ وہ صرف عوامی مفادات کی آڑ میں ذاتی مفادات کی جنگ لڑ رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ترجمان حکومت پنجاب حسان خاور نے مغلپورہ میں سرکاری گودام میں حکومتی نرخوں پر سستی چینی کے سٹاک کے معائنے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا۔ اے ڈی سی جی لاہور اور اے سی شالیمار ٹاؤن نے انہیں پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ کی جانب سے چینی کی طلب و رسد کے لیے بنائے گئے خصوصی ڈیش بورڈ کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ بھی دی۔ حسان خاور نے اس موقع پر بتایا کہ حکومت نے نوے ہزار ٹن چینی درآمد کر لی ہے جس میں سے انسٹھ ہزار ٹن چینی پر مشتمل دو جہاز آف لوڈ کیے جا چکے ہیں۔ فی الوقت تقریباً اٹھائیس ہزار ٹن چینی مارکیٹ میں ڈال دی گئی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ حکومت کی پوری کوشش ہے کہ سستی چینی عوام تک بغیر کسی رکاوٹ کے پہنچ سکے۔ ایک مربوط نظام کے تحت کین کمشنرز نے تمام اضلاع کا کوٹہ مختص کیا ہے جس کے تحت تمام اضلاع میں ڈپٹی کمشنرز کو مختص کردہ کوٹے کے تحت چینی فراہم کی جا رہی ہے۔ اس تمام عمل کی ٹیکنالوجی کی مدد سے نگرانی کی جا رہی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پنجاب میں اِن ہاؤس تبدیلی کی باتیں تین سالوں سے سنتے آ رہے ہیں۔ حقیقت یہ ہے کہ پنجاب میں تحریک انصاف کی حکومت اتحادی جماعتوں کی مکمل حمایت کے ساتھ مستحکم ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ  منڈیوں کا موجودہ نظام فرسودہ ہے جس میں اصلاحات لانے کے لئے حکومت کام کر رہی ہے۔ 

حسا ن خاور

مزید :

صفحہ اول -