حکومت جو مرضی کرلے اپوزیشن کبھی خوش نہیں ہوسکتی، چودھری سرور 

حکومت جو مرضی کرلے اپوزیشن کبھی خوش نہیں ہوسکتی، چودھری سرور 

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)گور نر پنجاب چودھری محمدسرور نے کہا ہے کہ حکومت اور اسٹبلشمنٹ ایک پیج پر ہے انشا اللہ عام انتخابات 2023میں ہی ہوں گے۔حکومت کے کالعدم ٹی ایل پی سے مذاکرات خوش آئند ہیں کیونکہ مسائل کا حل صرف مذاکرات کے ذریعے ہی ممکن ہے اچھا ہوتامذاکرات مظاہرین کے سڑکوں پر آنے سے پہلے کر لیے جاتے۔بزنس کمیونٹی کو خوشخبری دینا چاہتاہوں کہ پاکستان کو جی ایس پی پلس کا سٹیٹس مزید10 سال کیلئے مل جائے گا۔بھارت کے خلاف پاکستانی کرکٹ ٹیم نے کامیابی حاصل کر کے پاکستانی قوم کا سر فخر سے بلند کر دیا ہے۔ وہ سوموار کے روز گور نر ہاؤس لاہور میں بیگم پروین سرور کے ہمراہ شجر کاری مہم کا افتتاح اور بھار ت کیخلاف پاکستانی کر کٹ ٹیم کی کامیابی کی خوشی میں کیک کاٹنے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کر رہے تھے۔گور نر پنجاب نے کہا کہ حکومت جو مرضی کر لے اپوزیشن کبھی خوش نہیں ہوسکتی جہاں تک حکومت اور اسٹبلشمنٹ کے در میان تعلقات کا معاملہ ہے تو دونوں ایک پیج پر ہیں اور سب ملک کی ترقی اور خوشحالی کیلئے ملکر کام کر رہے ہیں۔اْنہوں نے کہا کہ اپوزیشن کو مشورہ دینا چاہتاہوں کہ وہ حکومت کیخلاف احتجاج کر نے کی بجائے ملک میں جمہوریت کی مضبوطی کیلئے اپنا کردار ادا کر یں۔ چودھری محمدسرور نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ کوئی شک نہیں کہ اسوقت مہنگائی بہت بڑا ایشو ہے اسی لیے حکومت مہنگائی کے معاملے پر عوام کو ٹارگٹڈ سبسڈی دینے جا رہی ہے اور حکومت کی کوشش ہے کہ زیادہ سے زیادہ عوام کو ریلیف دیا جائے جس کیلئے وفاقی اور پنجاب حکومت نے احساس پروگرام سمیت دیگر منصوبے بھی شروع کررکھے ہیں۔ اْنہوں نے کہا کہ دورہ یورپ کے دوران سب نے افغانستان میں امن کیلئے پاکستان کے کردار کو سراہا ہے۔

گورنر پنجاب 

مزید :

صفحہ آخر -