اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں 100فیصد اضافہ، یوٹیلیٹی سٹورز ویران 

اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں 100فیصد اضافہ، یوٹیلیٹی سٹورز ویران 

  

  ملتان (  نیوز   رپورٹر  ) یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کی جانب سے اشیائے خورونوش و ضروریہ کی قیمتوں میں ہونیوالے اضافہ کے باعث شہریوں نے ملتان سمیت ملک بھر کے یوٹیلٹی سٹورز سے منہ موڑ لیا ہے صارفین کے مطابق حکومت کی جانب سے چینی، گھی، کوکنگ آئل اور آٹا کے نرخوں میں 25 سے 100 فیصد تک قیمتوں میں اضافہ ہونے سے عوام کی قوت خرید جواب دے گئی ہے قبل ازیں حکومت کی جانب(بقیہ نمبر44صفحہ6پر)

 سے عوام کو فراہم کی جانیوالی سبسڈائز اشیائے خورونوش کی قیمتیں بالترتیب گھی فی کلو 170 روپے موجودہ نرخ 260 روپے کوکنگ آئل 271 روپے سے بڑھ کر 335 روپے آٹا 800 روپے سے بڑھ کر 950 روپے چینی 68 روپے سے بڑھ کر 85 روپے جبکہ دالیں، چاول، صابن، چائے کی قیمتوں میں 15 سے 20 فیصد تک اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جس کے باعث ملک کے متوسط و غریب طبقہ سے سبسڈائز ریلیف اور سانس اور روح کے رشتہ کو برقرار رکھنے کی آخری امید بھی چھین لی گئی ہے جبکہ یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن حکام کے مطابق یوٹیلٹی سٹورز پر وزیر آعظم ریلیف پیکج کے اختتام کے باوجود اشیائے خورونوش مارکیٹ کے مقابلے میں ارزاں نرخوں پر فراہم کی جارہی ہیں یوٹیلٹی سٹور پر 20 کلو آٹا 950 روپے جبکہ مارکیٹ میں 1200 روپے چینی 85 روپے کلو جبکہ مارکیٹ 105 روپے گھی 260 روپے کلو مارکیٹ 315 روپے چاول باسمتی 140 روپے کلو مارکیٹ 160 روپے سفید چنا 160 روپے کلو مارکیٹ 180 روپے لپٹن 450 گرام 488 روپے مارکیٹ 535 روپے فروخت ہورہی ہے علاوہ ازیں تمام ایٹمز پر 10 سے 15 فیصد صارفین کو ریلیف دیا جارہا ہے ذرائع نے بتایا کہ حکومت احساس پروگرام کو مزید توسیع دیتے ہوئے ملک کے غریب طبقات کو ٹارگٹڈ سبسڈائز اشیائے خورونوش کی فراہمی کے لیئے لائحہ عمل مرتب کررہی ہے تاکہ سبسڈائز اشیا صحیح حقداران تک پہنچے اس ضمن میں احساس پروگرام میں رجسٹریشن کے عمل کو مزید توسیع دیئے جانے کا امکان ہے اور ملک بھر کے یوٹیلٹی سٹورز اور ویئر ہاوسز کو آن لائن نظام کے تحت ایف بی آر اور ہیڈ کوارٹر اسلام آباد سے لنک کردیا گیا ہے تاکہ سبسڈائز پروگرام کو شفاف بنایا جاسکے۔

 اشیاء خوردونوش

مزید :

ملتان صفحہ آخر -