آریان خان کو گرفتار کرنے والے این سی بی کے افسر سمیر واکھنڈے بڑی مشکل میں پھنس گئے، آوازیں اٹھنے لگیں ، خط سامنے آ گیا 

آریان خان کو گرفتار کرنے والے این سی بی کے افسر سمیر واکھنڈے بڑی مشکل میں ...
آریان خان کو گرفتار کرنے والے این سی بی کے افسر سمیر واکھنڈے بڑی مشکل میں پھنس گئے، آوازیں اٹھنے لگیں ، خط سامنے آ گیا 

  

ممبئی (ڈیلی پاکستان آن لائن )آریان خان کو گرفتار کرنے والے اور منشیات کیس کے اہم ترین افسر سمیر واکھنڈے رشوت کے سنگین الزامات لگنے کے بعد اب بڑی مشکل میں پھنس گئے ہیں ۔

گورنمنٹ آف مہاشٹرا کے کیبنٹ وزیر نواب ملک نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ ” یہ لیٹر مجھے این سی بی کے ایک نامعلوم افسر کی جانب سے بھیجا گیا ہے ، بطور ذمہ دار شہری میں یہ خط ڈی جی نارکوٹکس کو بھیج رہاہے اور درخواست کر رہاہوں کہ وہ سمیر واکھنڈے پر ہونے والی تحقیقات میں اس خط کو بھی شامل کریں ۔“نواب ملک نے این سی بی کے افسر پر غیر قانونی طور پر موبائل فون ٹیپ کرنے کا بھی الزام عائد کیا ۔

ممبئی کے وکلاءنے بھی بھتے کے الزامات کے تحت این سی بی کے افسر سمیر واکھنڈے کے خلاف مقدمہ درج کروانے کیلئے آواز بلند کر دی ہے ۔

سمیر واکھنڈے کی اہلیہ ’کرانتی ریڈکار واکھنڈے‘نے بھی خط کے معاملے پر خاموشی توڑتے ہوئے پریس کانفرنس کی جس میں ان کا کہناتھا کہ اس طرح کے خطوط کی کوئی حقیقت نہیں ، میرے شوہر غلط نہیں ہیں ، ہم اس طرح کی چیزوں کو برداشت نہیں کریں گے۔

یاد رہے کہ ممبئی کے کروز ڈرگ کیس نے ایک ڈرامائی شکل اختیار کرلی ہے اور اس بار توجہ کا مرکز نہ ہی کنگ خان کے بیٹے آریان ہیں اور نہ ہی کوئی اور بالی وڈ سیلےبریٹی! اس ہائی پروفائل کیس میں توجہ کا مرکز بننے والے اس کیس کے آزاد گواہ پربھاکر سائل ہیں۔

رپورٹ کے مطابق پربھاکر جواس کیس کے ایک دوسرے گواہ کے پی گوساوی کے باڈی گارڈ بھی ہیں، نے اپنے حلفیہ بیان میں دعوی کیا ہے کہ نارکوٹکس کنٹرول بیورو کےزونل ڈائریکٹر سمیر واکھنڈے نے آریان خان کی رہائی کے لیے 25 کروڑ روپے کا مطالبہ کیا تھا۔ تاہم سمیر واکھنڈے نے ان الزامات کی تردید کرتے ہوئے ممبئی پولیس کمشنر کو خط لکھ کر سیکیورٹی طلب کرلی ہے۔

مزید :

تفریح -