باڑہ میں صدائے امن پروگرام میں خواتین ر ل گئیں 

باڑہ میں صدائے امن پروگرام میں خواتین ر ل گئیں 

  

باڑہ (نمائندہ پاکستان)باڑہ میں صدائے امن پروگرام میں خواتین رول گئے،خواتین ایک ٹوکن کیلئے کئی کئی دن انتظار کرنے لگے خواتین سے غیر ضروری کاعذات طلب کی جاتی ہے صوبائی حکومت نے تو عوامی مسائل کیلئے کمپلینٹ سیل تو کھول دیا ہے لیکن انکا کوئی بھی نہیں سنتا،باڑہ صدائے امن پروگرام منیجرخواتین مسائل میں ناکام فوری تبدیل کیا جائے۔باڑہ عوام ضلع خیبر تحصیل باڑہ میں قائم صدائے امن پروگرام سینکڑوں خواتین ایک ٹوکن کیلئے کئی کئی باڑہ صدائے امن پروگرام کے چکر لگانے پر مجبورہوگئے ہیں صدائے امن پروگرام میں خواتین کو کوئی سہولیات نہیں دی گئی ہے سخت گرمی میں خواتین اور چھوٹے بچے کھلے میدان میں بیٹھنے پر مجبورایک معمولی ٹوکن کیلئے قبائلی خواتین چوکیدار سے لیکر منیجر تک منت وسماجت کرتے ہیں۔ دوسری جانب موجودہ صدائے امن پروگرام منیجر صدائے امن پروگرام چلانے میں ناکام کیونکہ انکا پروگرام چلانے میں تجربہ نہیں فوری تبدیل کیا جائے تاکہ خواتین کا مسلے حل ہو سکے۔۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -