کورونا کا خدشہ،نیب ملازمین کو حفاظتی اقدامات  پر سختی سے عمل درآمد کر ا نے کا فیصلہ

      کورونا کا خدشہ،نیب ملازمین کو حفاظتی اقدامات  پر سختی سے عمل درآمد کر ا ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)قومی احتساب بیورو کے چئیرمین  جسٹس جاوید اقبال نے نیب ہیڈکوارٹرز میں ایک اجلاس کی صدارت کی۔ اجلاس میں نیب دفاتر میں کام کرنے والے تمام  افسران /اہلکاران کووڈ -19کی ممکنہ لہر کے تناظر میں حفاظتی اقدامات  پر سختی سے عمل درآمد کر وانے کا فیصلہ کیاگیا جس کے تحت  نیب دفاتر میں وزیٹرز کی آمد اور ملاقاتوں پر پابندی برقرار رکھی جائے گی۔تاہم مختلف مقدمات میں پیش ہونے والے گواہان اور ملزمان کی نیب میں پیشی کے موقع پر کورونا سے بچاؤ کے لئے تمام ممکنہ اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ تمام افسران واہلکاران کی نیب دفاتر میں انٹری پر تھرمل گن کے ذریعے ٹمپریچر چیک کیا جائے گا۔ بخار اور کھانسی کی صورت میں ان کو متعلقہ ڈاکٹر صاحبان سے رجوع کرنے میں ہر ممکن سہولیات دی جائیں گی۔ لفٹ میں کوئی بھی ملازم بغیر ماسک کے اندر داخل نہیں ہو گا۔ای فائلنگ کو ترجیح دی جائے گی اور اگر ہارڈفائل بھیجنا ناگزیر ہو تو فائل کو سینی ٹائز کر کے بھیجا جائے۔انٹر آفس میٹنگز ویڈیو لنک،اسکائپ پر ہی کرنا بہتر ہو گا اور اگر ذاتی میٹنگز ناگزیر ہو توشرکاء   کے درمیان ایک میٹر کا فاصلہ لازمی ہونا چاہیے۔ سٹاف اس بات کو یقینی بنائے کہ دفاتر کے کمرے میں موجودٹیبل اور کرسی وغیرہ کو بھی سینیٹائز کیا گیا ہو۔ہیڈ آفس آور رجنل بیو روزان احکامات پر سختی سے عمل کروائیں۔ مزید بر آں نیب انوسٹی گیشن آفیسر ز اور پراسیکیوٹر زکو کرونا ہدایات پر عمل کرتے ہوئے متعلقہ مجاز معزز عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات کومو ثر پیروی یقینی بنانے کا حکم بھی دیا گیا۔ اس سلسلے میں کوئی کو تاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔

کورونا کا خدشہ

مزید :

صفحہ اول -