نرسوں کا سروس سٹر کچر اپ گریڈ، سیمنٹ فیکٹریز کیلئے این او سی کو ٹائم لائن کردیا: عثمان بزدار

    نرسوں کا سروس سٹر کچر اپ گریڈ، سیمنٹ فیکٹریز کیلئے این او سی کو ٹائم لائن ...

  

 لاہور(جنرل رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے صوبے میں نرسنگ کیڈر کی بہتری کیلئے متعدد اقدامات کی اصولی منظوری دے دی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے نرسوں کے سروس سٹرکچرکو اپ گریڈ کرنے کی اصولی منظوری دی۔ اجلاس میں نرسوں کی ترقی کے امور کوسٹریم لائن کرنے کا فیصلہ کیاگیا۔ اجلاس میں نرسنگ کے شعبہ میں ایم فل اور پی ایچ ڈی کیلئے سکالرشپ دینے کی بھی اصولی منظوری دی گئی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے خطا ب کرتے ہوئے کہا کہ نرسنگ سکولوں کو اپ گریڈ کرکے نرسنگ کالجوں کا درجہ دیا جائے گا اور نرسنگ کالجوں کے ساتھ ہاسٹل بھی بنائے جائیں گے تاکہ نرسوں کی رہائش کا مسئلہ مستقل بنیادوں پر حل ہو سکے۔ نرسوں کو سکالرشپ پر بیرون ملک بھجوائیں گے۔انہوں نے کہاکہ پنجاب حکومت نے شعبہ صحت میں انقلابی اصلاحات کی ہیں اور 50لاکھ سے زائد صحت انصاف کارڈمستحق افراد میں تقسیم کرچکے ہیں۔ صحت انصاف کارڈکادائرہ کار مرحلہ وار مزید بڑھائیں گے۔ علاوہ ازیں پنجاب حکومت نے صوبے میں سرمایہ کاری کیلئے بڑا اقدام اٹھاتے ہوئے سیمنٹ فیکٹریز لگانے کیلئے مختلف محکموں کے این او سی کے اجراء کو آسان بناتے ہوئے ٹائم لائن کے ساتھ منسلک کر دیا ہے جبکہ غیر استعمال شدہ مائننگ لیز کے حوالے سے قواعدو ضوابط میں ضروری رد و بدل کابھی فیصلہ کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ سرمایہ کاروں کیلئے ہر طرح کی آسانیاں پیدا کریں گے۔ کسی بھی محکمے میں این او سی کے اجراء میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیں کروں گا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے سیکرٹری لوکل گورنمنٹ کی سربراہی میں سٹیرنگ کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی۔ کمیٹی این او سی کے اجراء  کے حوالے سے تمام پراسیس کا جائزہ لے گی اور فیکٹریز لگانے کیلئے سرمایہ کاروں کی درخواستوں پر این او سی کے بروقت اجراء کو یقینی بنائے گی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ صنعت لگے گی تو سرمایہ کاری آئے گی۔نئی سرمایہ کاری سے روزگار کے بے پناہ مواقع پیدا ہوں گے۔معیشت مضبوط ہوگی اور کاروبار پھلے پھولے گا۔ سیکرٹری صنعت نے بتایا کہ پنجاب حکومت کو نئے سیمنٹ پلانٹ لگانے کیلئے 23 درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔ 5سیمنٹ پلانٹ لگانے کی درخواستوں پر این او سی اگلے ماہ کے شروع میں جاری کر دیئے جائیں گے جبکہ دیگر درخواستوں پر بھی فوری طور پر ضروری کارروائی شروع کر دی گئی ہے۔ ایک سیمنٹ پلانٹ پر تقریباً 30 سے 40 ارب روپے لاگت آتی ہے۔

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -