انتخابات میں تنازع پر ٹرمپ فوج کو ملوث کر سکتے ہیں: سینئر جرنیل پریشان 

  انتخابات میں تنازع پر ٹرمپ فوج کو ملوث کر سکتے ہیں: سینئر جرنیل پریشان 

  

 واشنگٹن(اظہر زمان،بیوروچیف)پینٹا گون کے سینئرلیڈروں کو تشویش ہے کہ اگر آئندہ انتخابات کے حوالے سے کوئی بحرانی کیفیت پیدا ہوئی توصدر ٹرمپ فوج کوملوث کرلیں گے۔”نیویارک ٹائمز“نے اپنی تازہ اشاعت میں لکھا ہے کہ صدر دعویٰ کرتے ہیں کہ اس برس ہونے والے انتخابات درست نہیں ہو سکتے کیونکہ ڈاک کے ذریعے ووٹنگ سے فراڈ ہوسکتا ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے انتخابات کے نتائج سے قطع نظر یہ وعدہ نہیں کیا ہے کہ اقتدار کی منتقلی پر امن انداز میں ہو جائے گی۔محکمہ دفاع کے اعلیٰ حکام اور سینئر جر نیل صدر کے انتخابات کے بارے میں موقع پرفکر مند ہیں اس کے علاوہ انہیں صدر کے سابقہ دھمکی آمیز منافرت کے خلاف احتجاجی تحریکوں کے خلاف بغاوت ایکٹ کی کارروائیاں کرنے کاعندیہ دیا ہے۔نیویارک ٹائمز لکھتا ہے کہ انتخابات میں دھاندلی کو بنیاد بنا کر وہ فوج کوملوث کرسکتے ہیں۔ سینئر فوجی جرنیل واضح کر چکے ہیں کہ وہ اپنے آپ کو انتخابات سے دوررکھنا چاہتے ہیں اور اس میں ملوث ہونے کو تیار نہیں ہیں۔چیئرمین جائنٹ چیفس آف سٹاف جنرل مارک مائیلی نے گزشتہ ماہ امریکی کانگریس کے ارکان کے سوالات کاتحریری جواب دیتے ہوئے بتایا تھاکہ اگرانتخابات کے کسی پہلو پرتنازعہ پیداہوتاہے تو قانون،عدالتوں اورکانگریس اس کو حل کریں کے اور فوج اس سے الگ تھلگ رہے گی۔  ان کا کہنا تھامیں انتخابات کے حوالے سے فوج کامستقبل میں کوئی کردار نہیں دیکھ رہا تاہم متعدد فوجی جرنیل فکر مند ہیں کہ اگر انتخابی نتائج کو چیلنج کرنے پر احتجاج شروع ہو گیا توپھر فوج کا کیا کردار ہو گا۔محکمہ دفاع کے حکام نے ”نیو یارک ٹائمز“ کوبتایا کہ اگر انتخابات کے حوالے سے سیاسی بدامنی پیدا ہوتی ہے تواس صورت میں اسے ختم کر نے کیلئے فوج نے کوئی تیاری نہیں کی۔

ٹرمپ

مزید :

صفحہ اول -