ناکامی چھپانے کیلئے الگ صوبے کا نعرہ لگایا جا رہا ہے: فاروق ستار

  ناکامی چھپانے کیلئے الگ صوبے کا نعرہ لگایا جا رہا ہے: فاروق ستار

  

 کراچی (سٹاف رپورٹر)ایم کیو ایم تنظیم بحالی کمیٹی کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ کراچی میں اپنی بدترین کارکردگی کوچھپانے کے لیے الگ صوبہ بنانے کا کھوکھلا نعرہ لگایاجارہا ہے۔کراچی کو سمجھنے کیلئے شہر کو کراچی کے نوجوانوں کے حوالے کرنا ہوگا۔وزیراعظم کی ناکام پالیسیوں نے معیشت کو تباہ کردیا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ میرے ساتھ یہاں کاروباری افراد بھی موجود ہیں۔مجھے دو تین دنوں سے کراچی کے صنعتکاروں، تاجروں اور کاروباری حضرات کی جانب سے پریشان کن کال آرہی تھی۔وہ مجھے کہہ رہے تھے کہ فاروق بھائی کراچی کو بچائیں۔یہاں کی صنعتوں کو بچائیں۔ان کی کال کو ایس او ایس سے تعبیر کیا جائے۔جو لوگ صنعتوں کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرنے کی کوشش کررہے ہیں ان کو بٹھایا جارہا ہے۔گیس کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے صنعتیں تباہی کا شکار ہیں۔گیس کی لوڈشیڈنگ مصنوعی ہے۔انہوں نے کہا کہ معیشت کا تعلق کراچی سے ہے۔جب کراچی ڈوبا تو ارباب اقتدار کی توجہ کا مرکز بنا۔آرمی چیف بھی کراچی آئے۔خبروں میں ہے کہ وہ قومی سطح کے لیڈرز سے ملے ہیں۔مجھے نہیں معلوم کہ وہ اصل اسٹیک ہولڈرز ملے ہیں یا نہیں۔انہوں نے کہا کہ کرا چی کو سمجھنے کے لیے کراچی کے لوگوں کو دینا ہوگا۔ہاں کی سیاست کراچی کے نوجوانوں کے ہاتھوں میں دینا ہوگی۔یہی کراچی کی بقا کی ضمانت ہے۔ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ وزیر اعظم کی ناکام معاشی پالیسیوں نے معیشت کو تباہ برباد کیاہے۔ملک میں بے روزگاری کی انتہا ہوگئی ہے۔مہنگائی آسمان سے باتیں کررہیی ہے۔کوورنا وائرس نے بھی رہی سہی کسر نکال دی ہے۔کورونا  اور حالیہ بارشوں نے اور زیادہ کراچی کو معاشی طور پر بدترین تباہی سے دو چار کیا ہے۔بڑی صنعتیں اور چھوٹی صنعتوں سے 35 سے 40 لاکھ افراد کا روزگار وابستہ ہے۔ٹیکسٹائل انڈسٹری میں 15 سے 25 لاکھ مزدور کام کرتے ہیں۔8 لاکھ تک مزدور فارغ ہوگئے ہیں۔مجھے تاجروں نے کہا کہ آپ وزیر اعظم سے وزیر توانائی سے بات کریں۔وزیر خزانہ کہیں دکھائی نہیں دیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کراچی کو الگ صوبہ بنانے کا نعرہ کھوکھلا ہے۔کراچی میں اپنی بدترین ناکامی کو چھپانے کے لیے یہ نعرہ لگایا جارہا ہے۔شہر اب نعروں کی سیاست کا متحمل نہیں ہوسکتا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -