14 سالہ لڑکی سے 7 افراد کی بداخلاقی‘تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل 

14 سالہ لڑکی سے 7 افراد کی بداخلاقی‘تشویشناک حالت میں ہسپتال منتقل 

  

 رحیم یارخان(بیورو رپورٹ) 7 سے زائد ملزمان نے 14سالہ لڑکی کو رفع حاجت کیلئے جاتے ہوئے اغواء کرلیا‘نامعلوم مقام پر اجتماعی جنسی زیادتی کا نشانہ بنا تے رہے‘نیم بیہوشی کی حالت میں قومی شاہراہ پر سڑک کنارے پھینک کر فرار ہوگئے‘متاثرہ کو طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کردیا گیا‘ حالت تشویشناک‘ پولیس نے مقدمہ درج کرکے 6ملزمان کو گرفتار کرلیا‘ کارروائی شروع۔ تفصیل کے مطابق تھانہ آباد پور کی حدود موضع پلو شاہ کی بستی قادر کے رہائشی سعید احمد نے پولیس(بقیہ نمبر6صفحہ 6پر)

 کو اپنی شکائیت میں بیان کیا کہ 24ستمبر کو الصبح ثناء سعید رفع حاجت کیلئے گھر سے باہر کھیتوں کی جانب جا رہی تھی کہ اسی دوران کار سوار ملزمان قمر شاہ‘اشفاق احمد‘محمد اقبال وغیرہ نے اسے زبردستی اغواء کرلیا اور نامعلوم مقام پر منتقل کردیاجہاں قمر شاہ‘اشفاق احمد‘محمد اقبال‘اللہ جوایا‘بلال احمد نے دیگر ساتھیوں سجاد احمد اور مشتاق عرف مستی کے ہمراہ اسکی بیٹی ثناء سعید کو مبینہ اجتماعی جنسی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے‘ حالت غیر ہونے پر نیم بیہوشی کی حالت میں اس کی بیٹی ثناء سعید کو قومی شاہراہ شیخ واہن کے نزدیک سڑک کنارے پھینک کر فرار ہوگئے۔اطلاع پر ورثاء نے بیہوشی کی حالت میں ثناء سعید کو طبی امداد کیلئے شیخ زاید ہسپتال منتقل کیا جہاں پر طبی امداد کے باوجود اس کی حالت تشویشناک بیان کی جا رہی ہے۔واقعہ کی اطلاع ملتے ہی پولیس تھانہ آباد پور بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئی‘والد سعید احمد کی مدعیت میں مقدمہ نمبر405/20بجرم 365/Bت پ درج کرکے 6ملزمان کو گرفتار کرکے تھانہ منتقل کرکے کارروائی شروع کردی۔رابطہ کرنے پر ایس ایچ او تھانہ آباد پور چوہدری محمد یونس نے میڈیا کو بتایا کہ میڈیکل کے نمونے ڈی این اے سیمپلنگ کے لئے بھجوائے گئے ہیں‘ لڑکی کے ورثاء کے بیان پر واقعہ میں ملوث 6 افراد کو گرفتار کرکے انکے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور دیگر ملزمان کی تلاش جاری ہے جبکہ لڑکی کا میڈیکل مکمل ہونے کے بعد دیگر کارروائی عمل میں لائی جائے گی جبکہ لڑکی کے ورثاء نے وزیر اعلیٰ پنجاب سے واقعہ کا نوٹس لے کر انصاف فراہم کرنے اور مجرمان کو سخت سے سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

بداخلاقی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -