پی ایس ایل میچ فکسنگ کیس میں اہم پیش رفت، 13 ملزموں پر فردجرم عائد کرتے ساتھ ہی کن کو طلب کر لیا گیا؟

پی ایس ایل میچ فکسنگ کیس میں اہم پیش رفت، 13 ملزموں پر فردجرم عائد کرتے ساتھ ہی ...
پی ایس ایل میچ فکسنگ کیس میں اہم پیش رفت، 13 ملزموں پر فردجرم عائد کرتے ساتھ ہی کن کو طلب کر لیا گیا؟
کیپشن:    سورس:   Twitter

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بین الاقوامی گروہ سے تعلق رکھنے والے بکیوں کے خلاف مقدمہ میں اہم پیش رفت ہوئی ہے اور مقامی عدالت نے پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) 2020ءمیں میچ فکسنگ اور منی لانڈرنگ کیس میں 13 ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی جبکہ صحت جرم سے انکار پر گواہوں کو طلب کر لیا گیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق کراچی کی بینکنگ عدالت میں پاکستان سپر لیگ 2020ءمیں میچ فکسنگ اور منی لانڈرنگ کے مقدمہ کی سماعت ہوئی جس دوران عدالت نے 13 ملزمان پر فرد جرم عائد کر دی جبکہ ملزمان نے صحت جرم سے انکار کر دیا جس پر عدالت نے گواہوں کو بھی طلب کر لیا ہے، عدالت نے کلین چٹ سے متعلق ایف آئی اے کا پیش کردہ چالان اور ملزم محمد فیصل عرف چٹا کو مقدمے سے نکالنے کی استدعا مسترد کر دی تھی۔ 

گرفتار ملزمان میں مریندر کمار، نریش کمار، محمد فیصل عرف بوفیلا، احمد الرمغان، حنیف شیخ، محمد شامل ہیں جبکہ ملزمان جبار امین، آفتاب احمد عرف عاطف ڈالر، وقاص عرف پرنس، طلحہ صدیقی، نعمان علی ضمانت پر ہیں۔ پی ایس ایل 2020ءمیں بکیوں نے ایک کرکٹر سے بھی رابطہ کیا تھا، دبئی اور بین الاقوامی بکیوں کے گروہ نے پاکستان کی بدنامی کا پلان بنایا تھا جبکہ ایف آئی اے نے ملزمان کے قبضے سے موبائل فونز اور اہم شواہد حاصل کئے تھے۔ 

مزید :

کھیل -