نہ آ جائے کسی پر دل کسی کا | حفیظ جونپوری |

 نہ آ جائے کسی پر دل کسی کا | حفیظ جونپوری |
 نہ آ جائے کسی پر دل کسی کا | حفیظ جونپوری |

  

 نہ آ جائے کسی پر دل کسی کا

نہ ہو یارب کوئی مسائل کسی کا

اَدا سے اُس نے دو باتیں بنا کر

کسی کی جان لے لی ، دل کسی کا

ابھی جینا پڑا ہمیں کچھ دن اور

ٹلا پھر وعدۂ باطل کسی کا

بہت آہستہ چلمن کو ہٹانا

ملیں آنکھیں کہ بیٹھا دل کسی کا

حفیظ اس طرح بھرتے ہوجو آہیں

دُکھاؤ گے مگر تم دل کسی کا

شاعر: حفیظ جونپوری

(انتخابِ غزلیات حفیظ جونپوری:مرتبہ؛محبوب الرحمان فاروقی، سالِ اشاعت1989)

Na   Aa   Jaaey   Kisi   Par   Dil   Kisi   Ka

Na   Ho Ya   Rab   Koi   Masaail   Kisi   Ka

Adaa   Say   Uss    Nay   Do   Baaten   Bana   Kar

Kisi   Ki    Jaan   Lay   Li  ,   Dil   Kisi    Ka

Abhi   Jeena    Parra    Kuch   Din    Hamen   Aor

Tala   Phir   Waada-e-Baatil    Kisi   Ka

Bahut    Aaahista   Chilman   Ko   Hattaana

Milen   Aankhen    Keh    Betha   Dil   Kisi   Ka

HAFEEZ   Iss   Tarah   Jo   Bhartay   Ho   Aahen

Dukhaao   Gay   Magar   Tum   Dil   Kisi   Ka

Poet: Hafeez   Jaunpuri

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -