اب تو نہیں آسرا کسی کا  | حفیظ جونپوری |

اب تو نہیں آسرا کسی کا  | حفیظ جونپوری |
اب تو نہیں آسرا کسی کا  | حفیظ جونپوری |

  

اب تو نہیں آسرا کسی کا 

اللہ ہے اپنی بیکسی کا 

بیمار کو دیجئے تسلی 

یہ وقت نہیں جلی کٹی کا 

آپس میں ہوئی جو بد گمانی 

مشکل ہے نباہ دوستی کا 

بالیں سے کوئی اٹھا یہ کہہ کر 

انجام بخیر ہو کسی کا 

غم کا بھی قیام کچھ نہ ٹھہرا 

رونا کیا روئیے خوشی کا 

اندھیرا حفیظؔ ہو رہا ہے 

بجھتا ہے چراغ زندگی کا 

شاعر : حفیظ جونپوری

 (انتخاب غزلیات حفیظ جونپوری:مرتبہ؛محبوب الرحمان فاروقی، سالِ اشاعت1989)

Ab    To   Nahen    Aasra   Kisi   Ka

ALLAH   Hay   Apni   Be   Kasi   Ka

Bemaar   Ko    Dijiay   Tasalli 

Yeh   Waqt    Nahen   Jali   Kati   Ka

Aapas   Men    Hui    Jo   Badgumaani

Mushkill   Hay   Nibaah    Dosti   Ka

Baleen   Say   Koi   Utha   Yeh   Keh    Kar

Anjaam   Bakhair   Ho   Kisi    Ka

Gham   Ka    Bhi   Qayaam   Kuchh   Na   Thehra

Rona   Koi   Roiay    Khushi  Ka

Andhir    HAFEEZ   Ho    Raha   Hay

Bujhta    Hay    Charaagh    Zindagi   Ka

Poet: Hafeez    Jaunpuri

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -