طلال چودھری پر تشدد کا معاملہ، مبینہ خاتون کے بھائی کا موقف بھی آگیا

طلال چودھری پر تشدد کا معاملہ، مبینہ خاتون کے بھائی کا موقف بھی آگیا
طلال چودھری پر تشدد کا معاملہ، مبینہ خاتون کے بھائی کا موقف بھی آگیا

  

لاہور، فیصل آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چودھری کو تشدد کانشانہ بنایاگیا جس کے بعد وہ لاہور کے نجی ہسپتال میں زیر علاج ہیں، ان پر ہونیوالے تشدد  کو پارٹی کی خاتون رہنماء سے افیئرکیساتھ جوڑا جارہا ہے لیکن اب اس خاتون رہنما کے بھائی  کا موقف بھی آگیا۔

نجی ٹی وی چینل 92 نیوز کے مطابق خاتون کے بھائی نے بتایا کہ ہمارا جھگڑے سے کوئی تعلق نہیں ہے ، انہیں بھی یہ معلوم ہے کہ طلال چودھری کسی کے ساتھ جھگڑے یا حادثے میں زخمی ہوئے ہیں۔ یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ ایک اور نجی ٹی وی چینل نے ہسپتال ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ طلال چوہدری کو زیادہ چوٹیں آنے پر لاہور میں ڈیفنس کے علاقے میں موجود نجی ہسپتال منتقل کیا گیا ، جہاں انہیں ہسپتال کے ایگزیکٹو روم میں رکھا گیا ہے ۔ذرائع نے مزید بتایا کہ طلال چوہدری کے سر اور کمر پر چوٹیں آئی ہیں ،مختلف جگہ سے ہڈیاں بھی فریکچر ہوئیں جس کے بعد ان کے بائیں بازو کی سرجری کردی گئی ، بازو دو جگہ سے فریکچر تھا۔ بتایا گیا ہے کہ ان کے جسم پر مختلف جگہ تشدد کے نشانات ہیں۔ 

 یادرہے کہ گزشتہ رات یہ دعویٰ کیا گیا تھاکہ طلال چوہدری کا اپنی ہی پارٹی کی خاتون رہنما کے ساتھ تعلقات کی وجہ سے ان کے بھائیوں کیساتھ جھگڑا ہواہےلیکن اس کی باضابطہ تصدیق ہوسکی یا نہ ہی طلال چودھری کو آنیوالی چوٹوں کی کوئی ٹھوس دلیل سامنے آسکی۔ 

مزید :

قومی -