طلال چودھری پر تشدد کب اور کہاں ہوا؟ خبریں سامنے آنے کے بعد لیگی رہنما کے بھائی بلال چودھری بھی کھل کر بول پڑے

طلال چودھری پر تشدد کب اور کہاں ہوا؟ خبریں سامنے آنے کے بعد لیگی رہنما کے ...
طلال چودھری پر تشدد کب اور کہاں ہوا؟ خبریں سامنے آنے کے بعد لیگی رہنما کے بھائی بلال چودھری بھی کھل کر بول پڑے

  

لاہور، فیصل آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما طلال چودھری پر تشدد کی خبریں منظر عام پر آجانے کے بعد  لیگی رہنما کے بھائی بلال چودھری بھی کھل کر بول پڑے اور سارے واقعے کی تفصیلات بیان کردیں۔

جیونیوز کے مطابق بلال چودھری نے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ چار رو ز قبل کینال روڈ پر  طلال چودھری پر نامعلوم افراد نے حملہ کیا، رات کے وقت ہاتھا پائی اور زدو کوب کیا جس کے نتیجے میں انہیں معمولی چوٹیں آئیں اور وہ ہسپتال میں زیرعلاج ہیں۔ بلال چودھری کا کہناتھاکہ طلال کی حالت اب بہتر ہے ، وہ ہسپتال سے اجازت ملنے پر میڈیا سے بات چیت کریں گے اور باضابطہ اپنا موقف پیش کریں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ عائشہ رجب سے دست درازی اور رشتہ داروں سے جھگڑے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں۔

میڈیا رپورٹس میں ہسپتال ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ طلال چوہدری کو زیادہ چوٹیں آنے پر لاہور میں ڈیفنس کے علاقے میں موجود نجی ہسپتال منتقل کیا گیا ، جہاں انہیں ہسپتال کے ایگزیکٹو روم میں رکھا گیا ہے ۔ذرائع نے مزید بتایا کہ طلال چوہدری کے سر اور کمر پر چوٹیں آئی ہیں ،مختلف جگہ سے ہڈیاں بھی فریکچر ہوئیں جس کے بعد ان کے بائیں بازو کی سرجری کردی گئی ، بازو دو جگہ سے فریکچر تھا۔ بتایا گیا ہے کہ ان کے جسم پر مختلف جگہ تشدد کے نشانات ہیں۔ 

مزید :

قومی -