"ہمیں پتہ ہی نہیں "لیگی رہنمائوں نے طلال چودھری پر تشدد کے معاملے پر بات کرنے سے انکار کردیا

"ہمیں پتہ ہی نہیں "لیگی رہنمائوں نے طلال چودھری پر تشدد کے معاملے پر بات کرنے ...
کیپشن:    سورس:   tv screen shot

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال اور لیگی ترجمان مریم اورنگزیب نے طلال چودھری کے معاملے پر تبصرے سے انکار کردیا اور صحافیوں کے بار بار بتانے کے باوجود موقف اپنایا کہ " ہمیں پتہ نہیں"۔

مریم اورنگزیب ، احسن اقبال اور دیگر کی پریس کانفرنس کے دوران صحافیوں نے احسن اقبال سے سوال کیا کہ یہ کیسی سیاست ہے ، طلال چودھری صاحب کو کون لوگ  ہیں جنہوں نے ان پر تشدد کیا؟ اس پر احسن اقبال کا کہنا تھاکہ   میرے علم میں ایسی کوئی بات نہیں۔ صحافی نے پھر کہا کہ "ہم آپ کو بتارہے ہیں، ان کا آپریشن ہوا ہے ، کم ازکم مذمت کریں۔احسن اقبال نے پھر کہا کہ میرے علم میں نہیں ایسی کوئی بات نہیں، جس پر صحافی نے ایک بار بتانے کی کوشش کی تو جواب ملا کہ آپ  ان سے جا کر پوچھ لیں۔ مریم اورنگزیب نے مداخلت کی اور کہا کہ "ہمیں پتہ نہیں ہے ناں ، کیاجوا ب دیں"۔

 ادھرہسپتال ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ طلال چوہدری کو زیادہ چوٹیں آنے پر لاہور میں ڈیفنس کے علاقے میں موجود نجی ہسپتال منتقل کیا گیا ، جہاں انہیں ہسپتال کے ایگزیکٹو روم میں رکھا گیا ہے ۔ذرائع نے مزید بتایا کہ طلال چوہدری کے سر اور کمر پر چوٹیں آئی ہیں ،مختلف جگہ سے ہڈیاں بھی فریکچر ہوئیں جس کے بعد ان کے بائیں بازو کی سرجری کردی گئی ، بازو دو جگہ سے فریکچر تھا۔ بتایا گیا ہے کہ ان کے جسم پر مختلف جگہ تشدد کے نشانات ہیں۔ 

مزید :

قومی -