آج مرے ہاتھوں پر اپنی قسمت لکھ دے | حمیدہ شاہین|

آج مرے ہاتھوں پر اپنی قسمت لکھ دے | حمیدہ شاہین|
آج مرے ہاتھوں پر اپنی قسمت لکھ دے | حمیدہ شاہین|

  

آج مرے ہاتھوں پر  اپنی قسمت لکھ دے

دونوں کی تقدیر میں کیاہے نسبت،لکھ دے

اپنے خانے میں لکھ لے دولت،شہرت

میرے نام کے ہر صفحے پر عزت لکھ دے

میری حیثیت کو مان بھی، منوا بھی

کہاں کہاں کیا ہے میری اہمیت، لکھ دے

اپنے تاج و تخت کا قصہ لکھ لیکن

کس مسند پر متمکن  ہےعورت، لکھ دے

رُوپ ،جوانی اور بدن کی باتیں چھوڑ

اپنے اور میرے رشتے کی عظمت لکھ دے

شاعرہ : حمیدہ شاہین

 (شعری مجموعہ: دشتِ وجود؛سال اشاعت،2006)

Aaj   Miray    Haathon   Par    Apni    Qismat   Likh   Day

Donon   Ki    Taqdeer   Main    Kaya    Hay    Nisbat    ,  Likh   Day

Apnay    Khaanay    Men    Likh    Lay    Daolat   ,   Shohrat

Meray    Naam    K   Har    Safhay    Par    Izzat    Likh   Day

 Meri    Haisiyat    Ko    Maan    Bhi   ,  Manwaa   Bhi

Kahan    Kahan    Kaya   Hay    Meri     Ehmiyat     Likh   Day

Apnay    Taaj -o-Takht     Ka    Qissa    Likh   Lekin

 Kiss    Masnad    Par    Mutmakin    Hay    Aorat    Likh   Day

Roop   ,   Jawaani     Aor   Badan   Ki   Baaten    Chhorr

 Apnay    Aor   Meray    Rishtay   Ki    Azmat    Likh    Day

Potess: Hamida   Shahin

 

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -