پیر جماعت علی شاہ نے زندگی بھر عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ کیا:مقررین

پیر جماعت علی شاہ نے زندگی بھر عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ کیا:مقررین

  

 لاہور(لیڈی رپورٹر) امیر ملت حضرت پیر سید جماعت علی شاہ محدث علی پوریؒ ایک عظیم روحانی پیشوا‘ مجدد اور مصلح تھے۔ان کے انقلابی فکر و عمل نے برصغیر کے مسلمانوں میں حریت فکر بیدار کر دی۔ عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کیلئے حضرت پیر سید جماعت علی شاہ محدث علی پوریؒ اپنی تمام توانائیاں بروئے کار لائے اور فتنہ قادیانیت کی سرکوبی کیلئے اپنا تن من دھن قربان کر دیا۔ ان خیالات کااظہار مقررین نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان، لاہور میں منعقدہ خصوصی نشست بعنوان ”عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں حضرت امیر ملتؒ کا کردار“ کے دوران کیا۔ اس نشست کی صدارت سجادہ نشین آستانہئ عالیہ علی پورسیداں پیر سید منور حسین شاہ جماعتی نے کی۔ نظامت کے فرائض حافظ عثمان احمد نے انجام دیے۔ پیر سید منور حسین شاہ جماعتی نے کہا کہ مسئلہ ختم نبوت اسلام کا بنیادی اور متفقہ عقیدہ ہے۔محافظین ختم نبوت کی فہرست خلیفہ اول سیدنا صدیق اکبر رضی اللہ عنہ سے شروع ہو کر آج کے مسلمان تک پہنچتی ہے۔ اعلیٰ حضرت پیر سید جماعت علی شاہ محدث علی پوریؒعقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کیلئے اپنی تمام توانائیاں بروئے کار لائے۔ برصغیر میں جب مرزا غلام احمد قادیانی نے عقیدہ ختم نبوت کے برخلاف اپنے آپ کو جھوٹے نبی کی حیثیت سے پیش کیا تو اعلیٰ حضرت پیر سید جماعت علی شاہؒ میدان عمل میں اتر آئے اور بروقت مسلمانوں کے ایمان کی حفاظت فرمائی۔ممتاز عالم دین مفتی محمد اقبال چشتی،پیر سید عبدالماجد محبوب نے کہا کہ آپ ؐ کی ختم نبوت میں امت مسلمہ کی وحدت کا راز مضمر ہے۔ اس لئے اس عقیدہ میں چودہ سو سال سے کبھی بھی امت دورائے کا شکار نہیں ہوئی، پروفیسر راؤ ارتضیٰ اشرفی، علامہ محمد حسین آزاد جماعتی،علامہ فیاض الدین صدیقی، علامہ شیر محمد نقشبندی، علامہ رانا محمد عبداللہ جماعتی، سیکرٹری نظریہئ پاکستان ٹرسٹ شاہد رشید نے بھی خطاب کیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -