ہنر مند خواتین کو روزگار کے مواقع دینے ہوں گے،خالد مقبول

ہنر مند خواتین کو روزگار کے مواقع دینے ہوں گے،خالد مقبول

  

لاہور (نمائندہ خصوصی)سابق گورنر پنجاب اور جذبہ فاؤنڈیشن کے صدر لیفٹیننٹ جنرل (ر) خالد مقبول نے کہا ہے کہ ملک کو  معاشی ترقی اور خوشحالی کی جانب گامزن کرنے کیلئے ہنر مند (skilled) خواتین کو روزگار کے مواقع فراہم کرنا اور انکی حوصلہ افزائی وقت کی اہم ضرورت ہے کیونکہ نصف آبادی کو نظر انداز کرکے معاشی استحکام کی منزل کا حصول ممکن نہیں۔ خالد مقبول نے مزید کہا کہ جذبہ فاؤنڈیشن مخیر حضرات کے مالی تعاون سے چھوٹے پیمانہ پر کاروبار کرنے والی  ہنر مند خواتین کو اپنے کاروبار کو  وسعت دینے کیلئے مشینیں اور دیگر سامان مفت  فراہم کر رہی ہے۔ انھوں نے یہ بات آج یہاں مقامی ہوٹل میں جذبہ فاؤنڈیشن کی جانب سے چھوٹے کاروبار سے وابستہ  49 ہنر مند خواتین کو اپنا کاروبار وسعی کرنے کیلئے 30 لاکھ روپے مالیت کی جوکی سلائی مشینیں، بیوٹی پارلر کے آلات، میک اپ کٹس اور کمپیوٹر ز تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ تقریب میں جذبہ فاؤنڈیشن کے عہدیداران اور ڈونر ز حضرات نے بھی شرکت کی۔ لیفٹننٹ جنرل رٹائرڈ خالد مقبول نے بتایا کہ اب تک جذبہ فاؤنڈیشن 900 خواتین کو اپنے کاروبار کو وسعت دینے کیلئے کروڑوں روپے کی مشینیں، دیگر آلات اور کمپیوٹرز فراہم کر چکی ہے جس سے مذکورہ خواتین کے سمال بزنس کو بڑھاوا ملا ہے اور یہ خواتین دیگر بہت سی بے روزگار خواتین کو تربیت اور ملازمتیں فراہم کرنے کا زریعہ بن رہی ہیں۔

سابق گورنر پنجاب کا کہنا تھا کہ معاشی طور پر مستحکم خواتین نہ صرف اپنے خاندان کی کفالت میں بھر پور کردار ادا کرتی ہیں بلکہ اپنی اور بچوں کی صحت کے مسائل کو بھی بہتر انداز میں حل کر سکتی ہیں اسکے برعکس غریب اور بے روزگار خواتین کو بھی مالی مشکلات کی وجہ سے صحت کے مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور اعلاج کرانے کے اخراجات نہ ہونے کی وجہ سے صحت مزید خراب ہوتی ہے۔خالد مقبول نے ہنر مند خواتین کو سراہتے ہوئے کہا باہمت اور با صلاحیت خواتین مشکل حالات میں گھروں کو سنبھالتی ہیں۔  خالد مقبول کا کہنا تھا کہ جذبہ فاؤنڈیشن کو  انکے ریٹائر کولیگز اور دیگر مخیر حضرات کا تعاون حاصل ہے جسکی بدولت جذبہ فاؤنڈیشن خواتین کو معاشی طور پر انکے پاؤں پر کھڑا کرنے اور women empowerment کے مشن کو لیکر آگے بڑھ رہی ہے۔ تقریب میں 22 خواتین کو بیوٹی پارلر کا سامان، آلات، چیرز فراہم کی گئیں جبکہ 20 خواتین کو جوکی (juki) سلائی مشینیں، ایک computerize knitting مشین، چار خواتین کو کمپیوٹر ز اور دو خواتین کو سادہ سلائی مشینیں مف

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -