بورے والا میں شہری تنظیموں کا ہسپتال انتظامیہ کیخلاف مظاہرہ

بورے والا میں شہری تنظیموں کا ہسپتال انتظامیہ کیخلاف مظاہرہ

  

بورے والا(تحصیل رپورٹر)تحصیل ہسپتال بورے والا کے ڈاکٹروں،نرسسز اور دیگر عملہ کی غفلت اور لاپرواہی سے ہسپتال کی بدترین صورتحال کے خلاف شہر کی تمام (بقیہ نمبر36صفحہ6پر)

نمائندہ تنظیموں نے احتجاجی مظاہرہ کیا،اگر 24 گھنٹوں میں کوئی کاروائی نہ کی گئی تو شہر کی تمام تنظیمیں ہسپتال میں احتجاجی دھرنا دینگی،احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے سول سوسائٹی نیٹ ورک کے پیٹرن انچیف شیخ شہزاد مبین، سابق صدر بار میاں افتخار صابر،سابق تحصیل نائب ناظم غلام مصطفی بھٹی,سابق سکرٹری بار سردار ظہور احمد ڈوگر ایڈووکیٹ،پی ٹی آئی کے سینئر راہنما چوہدری اعجاز اسلم،وائس چیئرمین مارکیٹ کمیٹی علی سفیان سلدیرا،چوہدری امجد جٹ اور دیگر مقررین نے کہا کہ ہسپتال کے اندر ڈاکٹرز،نرسسز اور کام چور عملہ کے ایک مخصوص گروہ نے پورے ہسپتال کو یرغمال بنا رکھا ہے انکی طرف سے گزشتہ روز نرسسز کے ایشو کو ہوا دیگر تین روز تک ہسپتال بند کرکے مریضوں کو بے یارو مددگار چھوڑنا اور مریضوں کے ساتھ غیر مناسب رویہ قابل مذمت مذمت اور ناقابل برداشت ہے اس ہڑتال کی وجہ سے تین مریض جان سے گئے اور سینکڑوں مریض ذہنی و جسمانی اذیت کا شکار رہے اس ہڑتال نے شہریوں انتظامیہ اور ہسپتال کے عملہ کو آمنے سامنے لاکھڑا کیا ہیایسی نرسسز،ڈاکٹرز اور عملہ کو ہسپتال میں رہنے کا کوئی حق نہیں ہسپتال کے حالات بہت خراب ہوچکے ہیں ڈاکٹرز اور نرسسز اتنی بااثر ہیں کہ ہسپتال کا ایم ایس بھی انکا کچھ نہیں بگاڑ سکتا تحصیل کے واحد ہسپتال کا نظام بری طرح تباہ ہوچکا ہے 14 لاکھ کی آبادی کے واحد ہسپتال میں مریضوں کے ساتھ جو سلوک روا رکھا جارہا ہے وہ قابل افسوس اور اب ناقابل برداشت ہوچکا ہے سوشل میڈیا پر گندی زبان استعمال کرنے والے ڈاکٹرز کے خلاف فوری طور پر کاروائی نہ کی گئی تو پورے شہر کی نمائندہ تنظیمیں کل ٹی ایچ کیو ہسپتال بورے والا میں احتجاجی کیمپ لگائیں گی پی ٹی آئی کے سیکرٹری انفارمیشن کامران شاہد,سابق سیکرٹری بار چوہدری وقاص اشفاق،منصور احمد،مہر علی اور شہر کی مختلف تنظیموں کے ارکان نے وفود کی شکل میں اس احتجاج میں شرکت کی۔

مظاہرہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -