برطانیہ میں ٹرک ڈرائیورز کی قلت، متعدد پیٹرول پمپس بند، گاڑیوں کی قطاریں 

  برطانیہ میں ٹرک ڈرائیورز کی قلت، متعدد پیٹرول پمپس بند، گاڑیوں کی قطاریں 

  

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک)برطانوی حکومت کی جانب سے ٹرک ڈرائیورز کی کمی پر قابو پانے کے لیے ویزا قوانین میں عارضی طور پر نرمی کیے جانے کا امکان ہے۔برطانوی خبر ایجنسی رائٹرز کے مطابق ویزا پابندیوں میں سختی کے باعث ٹرک ڈرائیورز  کی شدید کمی ہوگئی ہے جس کے باعث پیٹرول پمپس اور گیس اسٹیشنز پر ایندھن کی فراہمی متاثر ہوئی ہے اور گاڑیوں کی طویل قطاریں لگی ہوئی ہیں، کچھ کو ایندھن ختم ہونے پر بند بھی کردیا گیا ہے۔ خبر ایجنسی کے مطابق تاجروں نے حکومت کو خبردارکیا ہیکہ اگر مسئلے پر فوری طور پر قابو نہیں پایا گیا تو کرسمس کے دوران مزید مشکلات کا سامنا ہوسکتا ہے۔برطانوی وزیراعظم آفس کی جانب سے اس حوالے سے کہہ گیا ہے کہ حکومت اس معاملے کو دیکھ رہی ہے اور ٹرک ڈرائیورز کی کمی پر قابو پانے کے لیے عارضی اقدامات کیے جارہے ہیں۔برطانوی میڈیا کے مطابق حکومت تقریباً 5 ہزار ٹرک ڈرائیورز کو عارضی ورک ویزا دینے پر غور کررہی ہے، اس حوالے سے ٹرانسپورٹرز اور تاجر کافی عرصے سے مطالبہ کررہے ہیں تاہم حکومت نے اسے منظور نہیں کیا تھا۔رپورٹ کے مطابق کورونا وائرس کی پابندیوں اوربریگزٹ کے باعث ٹرک ڈرائیورز کی کمی ہوئی ہے، اس دوران ڈرائیورز کی ٹریننگ اور ٹیسٹنگ بھی بند رہی جس کے باعث قلت میں مزید اضافہ ہوگیا۔حکومت کے مطابق ملک میں اس وقت ایندھن کی بالکل قلت نہیں ہے تاہم ٹرک ڈرائیورز کی کمی کے باعث ترسیل متاثر ہوئی ہے جس پر قابو پانے کے لیے فوری اقدامات کیے جارہے ہیں، شہری پریشان مت ہوں اور ضرورت کے مطابق ہی فیول بھروائیں۔ 

ٹرک ڈرائیورز

مزید :

صفحہ اول -