اپوزیشن لیڈر کی مشاورت کے بغیر چیئرمین نیب کا فیصلہ غیر آئینی ہو گا، مریم اورنگزیب

   اپوزیشن لیڈر کی مشاورت کے بغیر چیئرمین نیب کا فیصلہ غیر آئینی ہو گا، مریم ...

  

لاہور (آئی این پی) پاکستان مسلم لیگ (ن)کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کے چیئرمین نیب کے تقررکے حوالے سے اپوزیشن لیڈر سے مشاورت نہ کرنے کے بیان کو مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ شہباز شریف سے مشاورت عمران خان کی منشا، ذاتی پسند یا ناپسند کا مسئلہ نہیں بلکہ آئین اور قانون کا تقاضا ہے،اپوزیشن لیڈر کی مشاورت کے بغیر فیصلہ ہوا تو وہ غیر آئینی اور غیر قانونی ہو گا۔ عمران خان ایف آئی اے اور نیب سے عدالتوں میں جھوٹ بلوا رہے ہیں،حسد اور سیاسی انتقام نے اِن مرے ہوئے مقدموں کو زندہ رکھا ہو ہے، الٹے سیدھے ہوجائیں پھر بھی ایک دھیلے کی کرپشن ثابت نہیں ہوگی۔ہفتہ کو اپنے بیان میں مسلم لیگ (ن)کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے کہاکہ کرائے کے ترجمان کی ذہنی حالت پہ ترس آتا ہے،حقیقت یہ ہے کہ شہباز شریف اپوزیشن لیڈر ہیں، عمران خان نے شہباز شریف پر جھوٹے مقدمات بنائے، سابق ڈی جی ایف آئی پہ شہباز شریف کے خلاف جھوٹے مقدمات بنانے کے لئے دبا ؤڈالا۔ حقیقت یہ ہے کہ ملزم عمران خان مالم جبہ، ہیلی کاپٹر، بلین ٹری سونامی، بی آر ٹی پشاور، آٹا چینی چوری میں مطلوب، غیر قانونی فارن فنڈنگ، 23 خفیہ اکاؤنٹس میں مطلوب، شہباز شریف کی طرف سے دائر ہتک عزت کے دس ارب روپے کے دعوی ٰمیں بھی مفرور اور مطلوب ہے۔ شہباز شریف نے بطور وزیرِ اعلیٰ اپنے فیصلوں سے اپنے خاندان کے کاروبار کو نقصان پہنچایا اور عوام کو فائدہ پہنچایا،ہائی کورٹ اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کے بعدبے بنیاد اور سیاسی انتقام پر مبنی مقدمے کو ختم ہو جانا چایئے۔ 

مریم اورنگزیب

مزید :

صفحہ اول -