محسود عبدالائی قوم کے ذیلی شاخوں کے مابین زمینی تنازعہ میں فائربندی 

محسود عبدالائی قوم کے ذیلی شاخوں کے مابین زمینی تنازعہ میں فائربندی 

  

ٹانک(نمائندہ خصوصی)جنوبی وزیرستان: محسود عبدالائی قوم کے ذیلی شاخوں کے مابین زمینی تنازعہ میں فائربندی ہوگئی، پانچ اکتوبر کو فریقین کے مابین مسلے کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کا فیصلہ، قبائلی رہنما ملک محمد ہاشم تفصیلات کے مطابق جنوبی وزیرستان سب ڈویژن لدھا تحصیل مکین میں دو دن قبل عبدالائی قوم کے تین ذیلی شاخوں شمک خیل، پینجپلورائی اور للے خیل کے مابین مکین کمرشل مارکیٹ کے ساتھ ٹرانسپورٹ آڈہ کی زمین پر خونریز جھڑپ ہوئی تھی جسمیں فائرنگ کے تبادلے میں دونوں فریقین کے چار افراد شدید زخمی ہوگئے تھے اس سلسلے میں محسود قبائل کے عمائدین نے دونوں فریقین کے مابین فائربندی کرنے کے بعد مذاکرات کا سلسلہ شروع کیا، جرگے کے بعد قبائلی رہنما ملک محمد ہاشم نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ محسود قبائل کے مشران نے دونوں فریقین کے مابین فائربندی کردی ہے، جرگے فیصلے کے مطابق دونوں فریقین کے مابین مسلے کا حل مذاکرات کے ذریعے نکالا جائے گا، ان کا کہنا تھا کہ دونوں اطراف کے مسلح افراد سے مورچے خالی کر دیئے گئے اور پشتو روایات کے تحت تیگہ اور میعاد رکھ دیا گیا ہے اور مصالحتی جرگے نے دونوں فریقین کے درمیان مذاکرات کا سلسلہ پانچ اکتوبر سے شروع کرے گا، محسود قبائل کے کوششوں سے کامیاب مذاکرات کے بعد مکین کمرشل مارکیٹ کے ہزاروں دوکان کھل گئے، لوگ روز مرہ کی خرید و فروخت میں مصروف ہوکر بازار میں کاروباری سرگرمیاں دوبارہ بحال ہوگئیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -