جب پاکستان میں موٹروے سائن ہوئی تب نواز شریف فیملی ایون فیلڈ اپارٹمنٹس خرید رہی تھی ، فواد چودھری 

جب پاکستان میں موٹروے سائن ہوئی تب نواز شریف فیملی ایون فیلڈ اپارٹمنٹس خرید ...
جب پاکستان میں موٹروے سائن ہوئی تب نواز شریف فیملی ایون فیلڈ اپارٹمنٹس خرید رہی تھی ، فواد چودھری 

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چودھری نے کہا کہ عمران خان سڑکوں کے نہیں ، سڑکوں کی آڑ میں ہونے والی کرپشن کے خلاف ہیں ، جب پاکستان میں پہلی موٹروے کا معاہدہ سائن ہو رہا تھا تب نواز شریف فیملی کی جانب سے لندن میں ایون فیلڈ اپارٹمنٹس خریدے جا رہے تھے ، یہ پیسہ کہاں سے آرہا تھا ؟۔

پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ میں مراد سعید کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ جب وزیر اعظم اور وزراءباقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت کرپشن کرتے ہیں تو قومیں تباہ ہوتی ہیں، شریف فیملی اور زرداری فیملی نے پاکستان سے پیسہ لیا اور باہر منتقل کر دیا ، شہباز شریف کیس میں دیکھا گیا کہ پاپڑوں والے کے اکاو¿نٹس میں پچیس ارب روپے آئے ، یہ وہ پیسہ ہے جس کا ہمیں پتہ چل گیا ہے ، اربوں روپے اب بھی ایسے ہیں جو ابھی تک ہمیں علم نہیں ہے ۔ 

فواد چودھری نے کہا کہ ہم قرضے واپس کرنے کیلئے قرضے لیتے ہیں جس کے باعث اشیائے خور و نوش سمیت عام چیزوں کی قیمتیں اوپر جاتی ہیں ، بجلی اور گیس کی قیمتیں بڑھتی ہیں ، ہمارا مقابلہ مافیا سے ہے ۔

وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے کہا کہ پچھلے دور میں وزارت مواصلات گزشتہ دور میں نواز شریف نے اپنے پاس رکھی تھی ، اس دور میں کہا کہ کھاتا ہے تو لگاتا بھی تو ہے ، 90 کی دہائی میں بننے والی پہلی موٹر وے کا ایک کتاب میں ذکر ہے ، 160 ملین ڈالرز صرف ایک موٹر وے پر کمیشن کا سکینڈل بھی سامنے آیا تھا ۔ 

مراد سعید نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان جب اقتدار میں آئے تو ہر قدم پر عوام کا پیسہ بچایا ، وزیر اعظم قرضے لے کر موٹر وے بنانے کے خلاف تھے اور ہیں ، ہم جو موٹروے بنا رہے ہیں یہ پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت بنا رہے ہیں ۔لاہور اسلام آباد موٹر وے 107کلو میٹر لمبا بنایا گیا جس سے تعمیر کی لاگت  میں اضافے کے ساتھ ساتھ عوام کو پٹرول سمیت گاڑیوں کی مینٹی نینس کی مد میں بھی بھاری نقصان ہوا۔

مزید :

اہم خبریں -بزنس -