کوئٹہ میں طلبہ کے احتجاج کے دوران پولیس شیلنگ سے زخمی ہونے والی طالبہ ہانی بلوچ دم توڑ گئیں

کوئٹہ میں طلبہ کے احتجاج کے دوران پولیس شیلنگ سے زخمی ہونے والی طالبہ ہانی ...
کوئٹہ میں طلبہ کے احتجاج کے دوران پولیس شیلنگ سے زخمی ہونے والی طالبہ ہانی بلوچ دم توڑ گئیں

  

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آ ن لائن )صوبائی دارالحکومت میں آن لائن انٹری میڈیکل ٹیسٹ کے خلاف طلبہ کے احتجاج کے دوران گزشتہ روزپولیس شیلنگ سے زخمی ہونے والی طالبہ ہانی بلوچ دم توڑ گئیں۔

نجی ٹی وی ہم نیو ز کے مطابق احتجاج میں شریک طلبہ نے الزام عائد کیا ہے کہ ہانی بلوچ گزشتہ روز پولیس تشدد سے شدید زخمی ہوئی تھیں اوراس کے ہاتھ اور جسم کے دیگرحصوں پر زخم آئے تھے جبکہ گھر جاتے ہی ہانی کی طبیعت خراب ہوگئی تھی۔ساتھی طلبہ کا کہنا ہے کہ ہانی بلوچ طلبہ تحریک میں فرنٹ لائن پر تھیں۔

دوسری جانب ہانی بلوچ کے خاندان والوں کا کہنا ہے کہ ہانی کی طبیعت کافی عرصے سے خراب تھی لیکن اس کے باوجود وہ آن لائن انٹری میڈیکل ٹیسٹ کے خلاف جاری احتجاجی تحریک میں باقاعدگی سے شرکت کرتی رہی ہیں تاہم گزشتہ روز پولیس کی جانب سے جب طلبہ کو منتشر کرنے کے لئے شیلنگ کی گئی تو اس میں وہ زخمی ہو ئی تھیں جس کے بعد انکی طبیعت زیادہ خراب ہوگئی تھی ۔ گزشتہ رات گئے ہانی کو سول ہسپتال میں منتقل کیا گیا تھا جہاں آج ان کا انتقال ہوگیا ۔

ہسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ابھی تک ہمارے پاس میڈیکل رپور ٹ نہیں آئی ہے ، رپورٹ آنے کے بعدہی اصل صورتحال واضح ہوگی جبکہ صوبائی حکومت کی جانب سے بھی اس معاملے پر کوئی بیان نہیں جاری کیا گیا ہے۔

مزید :

قومی -علاقائی -بلوچستان -کوئٹہ -