پی ٹی آئی حکومت کا قومی ترانے کی نئی ریکارڈنگ کا فیصلہ

پی ٹی آئی حکومت کا قومی ترانے کی نئی ریکارڈنگ کا فیصلہ
پی ٹی آئی حکومت کا قومی ترانے کی نئی ریکارڈنگ کا فیصلہ
سورس: Wikimedia Commons

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی حکومت کی خصوصی کمیٹی نے بڑا فیصلہ کرلیا۔ قومی ترانے کی از سرِ نو ریکارڈنگ کا اعلان کردیا۔ قومی ترانہ جدید ساز اور نئی آواز کے ساتھ ریکارڈ ہوگا۔ قومی ترانے کی نئی ویڈیو ریکارڈنگ بھی کی جائے گی۔

نجی ٹی وی جی این این کے مطابق آرٹس کونسل کراچی میں وزارت اطلاعات کی خصوصی کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں ارکان جاوید جبار اور ارشد محمود نے شرکت کی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ قومی ترانہ نئے سرے سے ریکارڈ کیا جائے گا۔ قومی ترانے کی نئی ریکارڈنگ میں جدید آلات کا سہارا لیا جائے گا۔

سنہ 1954 کے بعد پہلی بار قومی ترانے کی ریکارڈنگ کے حوالے سے تبدیلیاں کی جائیں گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ قومی ترانے کی نئی ریکارڈنگ میں دوست ممالک کے آرکیسٹراز سے بھی مدد لی جائے گی۔

ترانے کی نئی ویڈیو ریکارڈنگ میں چاروں صوبوں، گلگت بلتستان اور کشمیر کو شامل کیا جائے گا۔ نیا ترانہ پاکستان کے 75 ویں یوم آزادی کے موقع پر جاری کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ قومی ترانے کی نئی ریکارڈنگ کا معاملہ سنہ 2018 سے چل رہا ہے۔ فواد چوہدری نے بطور وزیر اطلاعات اس کا آغاز کیا تھا تاہم ان کا قلمدان تبدیل ہونے کے بعد یہ کام سست روی کا شکار ہوگیا تھا۔ رواں برس اپریل میں اپنے ایک ٹویٹ میں فواد چوہدری نے تصدیق کی تھی کہ قومی ترانے کی جدید ساز و آلات کے ساتھ ریکارڈنگ کا معاملہ آخری مراحل میں ہے۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -