عام انتخابات میں مبینہ دھاندلیاں ، جوڈیشل کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو سوالنامہ دیدیا

عام انتخابات میں مبینہ دھاندلیاں ، جوڈیشل کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو ...
عام انتخابات میں مبینہ دھاندلیاں ، جوڈیشل کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو سوالنامہ دیدیا

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) عام انتخابات میں ہونیوالی مبینہ دھاندلیوں کی تحقیقات کے لیے تشکیل دیئے گئے جوڈیشل کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو تین نکات پر مشتمل سوالنامہ پیش کرکے جواب طلب کرلیاجبکہ بلوچستان نیشنل پارٹی کی درخواست پر دوروز میں الیکشن کمیشن سے جواب طلب کرلیا۔ کمیشن نے ریمارکس دیئے ہیں کہ کچھ جماعتوں نے ٹرمز آف ریفرنس کا خیال ہی نہیں رکھااور عمومی دستاویزات پیش کیں ۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں جوڈیشل کمیشن کا اجلاس ہوااور کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو تین سوالات پر مشتمل سوالنامہ پیش کردیاجس میں تین بنیادی سوالات پوچھے گئے۔ عام انتخابات شفاف ہوئے یا نہیں ؟ منظم دھاندلی ہوئی تو شواہد کیا ہیں ؟دھاندلی کا منصوبہ کس نے بنایا؟ شواہد کیساتھ آگاہ کیاجائے ۔

بلوچستان نیشنل پارٹی کے وکیل شاہ خاور نے تین سوالات کی بجائے پانچ سوالا ت پر مشتمل سوالنامہ دینے کی استدعا کرتے ہوئے کہاکہ عام انتخابات میں منظم دھاندلی ہوئی اور بلوچستان میں چیف سیکریٹری براہ راست ملوث تھے ، کئی حلقوں میں سرے سے پولنگ ہی نہیں ہوئی،درخواستوں کیساتھ ثبوت بھی لف ہیں جبکہ ریٹرننگ افسران بھی تبدیل ہوتے رہے جس پر ٹربیونل کے سربراہ اورچیف جسٹس ناصرالملک نے کہاکہ ریٹرننگ افسران کی تبدیلی الیکشن کمیشن کے علم میں ہوناچاہیے تھی ، کچھ جماعتوں نے ٹرمز آف ریفرنس کے مطابق دستاویزات جمع نہیں کرائیں ،زیادہ تردستاویزات عمومی ہیں اور بی این پی کی درخواست پر دوروز میں الیکشن کمیشن سے جواب طلب کرلیا۔

مزید :

الیکشن ۲۰۱۳ -Headlines -