کوئی بھی چیز یاد رکھنے کا آسان ترین طریقہ سائنسدانوں نے بتادیا

کوئی بھی چیز یاد رکھنے کا آسان ترین طریقہ سائنسدانوں نے بتادیا

لندن(نیوزڈیسک)اگر آپ اپنی کمزور یاداشت کی وجہ سے پریشان ہیں اور اس کے لئے ادویات استعمال کرنے کا سوچ رہے ہیں تو یہ خیال ترک کردیں کیونکہ سائنسدانوں نے اس مقصد کے لئے ایک ایسا طریقہ بتادیا ہے کہ یاداشت تیز ہوجائے گی۔

یونیورسٹی آف واٹرلو کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اگر آپ کوئی چیز یاد رکھنا چاہتے ہیں تو اس کی تصویر بنالیں۔ان کا کہنا ہے کہ ایسی چیز جس کی ڈرائنگ بنالی جائے کو ان چیزوں کے مقابلے یاد کرنا زیادہ آسان ہوتا ہے جن کو لکھ لیا جائے۔تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ الفاظ کو تصویر میں دھالنے سے ہماری دایاشت کے چار عناصر سرگرم ہوجاتے ہیں جس کی وجہ سے کسی بھی چیز کو ان تصاویر کو سامنے لاکر یاد کرنا آسان ہوجاتا ہے۔کسی بھی بات کو تصویر میں دھالنے کے لئے ہمیں کوئی فزیکل چیز کو ذہن میں لانا ہوگا،اس کے بعد اس کی تصویر کشی ہوگی اورپھر دماغ اسے تصویر میں ڈھالے گا۔یونیورسٹی کے ڈیپارٹمنٹ آف سائیکالوجی کے پروفیسر ڈاکٹر جیفری ویمز کا کہنا ہے کہ الفاظ کی نسبت تصاویر کی وجہ سے کسی بھی چیز کو یاد رکھنے کی استطاعت دوگنی ہوجاتی ہے۔

تحقیق کاروں نے ایک گروپ کو مختلف الفاظ جیسے کیلے،ناشپاتی وغیرہ دئیے اور انہیں یہ چوائس دی گئی کہ40سیکنڈ میں ان الفاظ کو چاہے تو لکھ لیں یا اس کی تصویر کشی کرلیں۔اس کے بعد اس گروپ کو مختلف طرح کی موسیقی سنائی گئی تاکہ ان کی توجہ بٹائی جاسکے اور بعد میں انہیں الفاظ یاد کرنے کے لئے کہا گیا۔جن لوگوں نے ان لافاظ کو یاد رکھنے کیلئے تصاویر بنائی تھیں انہیں یہ الفاظ ان لوگوں کی نسبت جلدی یاد رہے جو انہیں لکھ کر یاد کررہے تھے۔ڈاکٹر جیفری کا کہنا ہے کہ یہ بات بھی دیکھنے کوملی کہ جن لوگوں نے تصاویر کے ساتھ چیزیں یاد کی تھیں ان کو یہ اشیاء کافی دیر بعد بھی یاد کرنے میں مشکل پیش نہ آئی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...