امریکی محکمہ انصاف کا ہر سال 40ہزار قیدیوں کو ہنر مند بنانے کا منصوبہ

امریکی محکمہ انصاف کا ہر سال 40ہزار قیدیوں کو ہنر مند بنانے کا منصوبہ

واشنگٹن(اے پی پی)امریکی محکمہ انصاف نے کہا ہے کہ ہر سال40 ہزار سے زائد قیدیوں کو پیشہ ورانہ ہنر اور روزگار کی تربیت فراہم کرنے کا کام شروع کیا جائے گا تاکہ وہ معاشرے کے کارآمد فرد بن سکیں۔وائس آف امریکا کے مطابق اٹارنی جنرل لوریتا لِنچ اس پیکیج کا اعلان کریں گی جو سزاؤں میں اصلاحات کے قانون کی دو عشرے پرانی کاوش کا جْزو ہے، جس میں متعدد مجرمان کو قید کیے جانے سے متعلق جائزہ لینے کے لیے کہا گیا تھا۔رہائی پانے والے قیدیوں کے لیے اس پیکیج میں تعلیمی نظام الاوقات اور روزگار کی تربیت کے ساتھ ساتھ منشیات کی عادت چھڑانے اور ذہنی صحت کا علاج کرنا شامل ہوگا۔انہوں نے ملک کے گورنروں پر زور دیا کہ وہ قید سے رہائی پانے والوں کو ریاست کے شناختی کارڈ جاری کریں، تاکہ جیل سے باہر قدم رکھنے پر اْن کا عبوری دور بہتر انداز سے گزرے اور اْنھیں ڈرائیور لائسنس کے حصول میں مدد ملے۔انہوں نے کہا کہ قید کاٹنے کا طویل مدتی اثر یہ ہوتا ہے کہ رہائی پانے والوں کو روزگار، رہائش، اعلیٰ تعلیم اور بینک کریڈٹ میں رکاوٹیں کھڑی ہو جاتی ہیں، اور یہ رکاوٹیں اْن کی ذاتی زندگی پر پْری طرح اثرانداز ہوتی ہیں، جب کہ اْنھوں نے کارآمد شہری بننے کی ٹھان لی ہوتی ہے، اور وہ کسی طور پر مجرمانہ زندگی کی جانب لوٹنا نہیں چاہتے۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...