روئی کی قیمتوں میں زبر دست تیزی ، نئی بلند سطح 6ہزار روپے فی من یک پہنچ گیا

روئی کی قیمتوں میں زبر دست تیزی ، نئی بلند سطح 6ہزار روپے فی من یک پہنچ گیا

کراچی (اکنامک رپورٹر) روئی کی قیمتوں میں زبردست تیزی کا رجحان ۔ملک کے مختلف شہروں میں گزشتہ دو روز کے دوران روئی کی قیمتیں 200 روپے فی من ریکارڈ اضافے کے ساتھ جاری سیزن کی نئی بلند ترین سطح 6 ہزار روپے فی من تک پہنچ گئیں ۔چیئر مین کاٹن جنرز فورم احسان الحق نے بتایا کہ بیشتر کاٹن زونز میں رواں سال نامناسب موسمی حالات کے باعث کپاس کی بوائی میں غیر معمولی تاخیر ہونے جبکہ جننگ فیکٹریوں میں روئی کے سٹاکس بہت کم ہونے کے باعث ٹیکسٹائل ملز مالکان کی جانب سے روئی خریداری رجحان میں زبردست اضافہ دیکھا جا رہا ہے جس کے باعث روئی کی قیمتوں میں غیر متوقع تیزی کا رجحان سامنے آیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ چند روز قبل چین کی جانب سے اپنے ذخائر سے دو لاکھ ٹن روئی فروخت کرنے بارے جاری ہونے والی پالیسی میں روئی کے نرخ 81,82 سینٹ فی پاؤنڈ مختص کیے گئے تھے جو کہ عالمی منڈیوں کے مقابلے میں تقریباً 10 سینٹ فی پاؤنڈ زائد ہیں جس کے باعث چینی ٹیکسٹائل ملز مالکان نے مذکورہ روئی خریدنے میں کسی خاص دلچسپی کا اظہار نہیں کیا جس کے باعث عالمی منڈیوں میں روئی کی قیمتوں میں زبردست تیزی کے رجحان کے باعث پاکستان میں بھی اس کے اثرات دیکھے جا رہے ہیں اور توقع ظاہر کی جا رہی ہے کہ آئندہ چند روز کے دوران روئی کی قیمتوں میں مزید تیزی کا رجحان سامنے آئے گا۔انہوں نے بتایا کہ پنجاب بھر کی ٹیکسٹائل ملز کو پچھلے کچھ عرصے کے دوران گیس اور بجلی کی مسلسل فراہمی سے روئی کی کھپت میں ہونے والے اضافے کو بھی روئی کی قیمتوں میں ایک بڑی وجہ قرار دیا جا رہا ہے ۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...