نادرا حکام شہریوں کو تنگ کرتے ہیں انہیں روکنے کی ضرورت ہے، ہائیکورٹ

نادرا حکام شہریوں کو تنگ کرتے ہیں انہیں روکنے کی ضرورت ہے، ہائیکورٹ

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے بزرگ خاتون کو 11برس سے شناختی کارڈ جاری نہ کرنے کے خلاف درخواست کی سماعت کے دوران قرار دیا ہے کہ نادرا حکام جس طرح شہریوں کو تنگ کرتے ہیں اس کو روکنے کی ضرورت ہے۔مسٹر جسٹس شمس محمود مرزا نے چوبرجی کی رہائشی 60سالہ خاتون یاسمین عباسی کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ خاتون گزشتہ 11برس سے کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ کے حصول کے لئے مسلسل نادرا دفاتر کے چکر لگا رہی ہے اور حکام کے ناروا رویے کے باعث خاتون کا شناختی کارڈ نہیں بنایا جا رہا ہے، خاتون نے عمرہ کی ادائیگی کے لئے جانا ہے مگر کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ کی عدم دستیابی کے باعث وہ سعودی عرب روانہ نہیں ہوسکتی ،نادرا حکام کو درخواست گزار کا شناختی کارڈ بنانے کا حکم دیا جائے، عدالت نے ریمارکس دیئے کہ شناختی کارڈ کا حصول ہر شہری کا بنیادی حق ہے اور نادرا حکام جس طرح شہریوں کو تنگ کرتے ہیں اس کو روکنے کی ضرورت ہے، عدالت نے مزید سماعت دو ہفتوں تک ملتوی کرتے ہوئے نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی سے تحریری وضاحت طلب کر لی ہے۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...