مبینہ بیوی کی بازیابی کیلئے شوہرہونے کے دعویدار شخص کی دائردرخواست مسترد

مبینہ بیوی کی بازیابی کیلئے شوہرہونے کے دعویدار شخص کی دائردرخواست مسترد

لاہور(نامہ نگار خصوصی) لاہورہائیکورٹ کے جسٹس چودھری مشتاق نے مبینہ بیوی کی بازیابی کے لئے شوہرہونے کے دعویدار شخص کی جانب سے دائردرخواست مسترد کرتے ہوئے لڑکی کو اس کی ماں کے ساتھ جانے کی اجازت دے دی،عدالت نے درخواست گزار کو مبینہ بیوی سے علیحدگی میں ملاقات کی اجازت دینے سے متعلق درخواست بھی مسترد کر دی۔درخواست گزارندیم نے عدالت کوبتایا کہ اس نے نادیہ نامی لڑکی سے پسند کی شادی کی مگرشادی کے بعد اس کے والدین نے اسے زبردستی اپنی پاس رکھا ہوا ہے۔شوہر ہونے کے دعویدارندیم نے عدالت سے استدعا کی کہ اس کی بیوی بازیاب کرانے کا حکم دیا جائے۔عدالتی حکم پرنادیہ نامی لڑکی اپنی والدہ کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئی اور عدالت کو آگاہ کیا کہ اس کی شادی دو سال قبل اللہ دتہ نامی شخص سے ہو چکی ہے وہ ندیم نامی کسی شخص کو نہیں جانتی جس پر عدالت نے نادیہ نامی لڑکی کو اسکی ماں کے ساتھ جانے کی اجازت دیتے ہوئے حبس بیجا کی درخواست مسترد کر دی۔عدالت نے شوہر ہونے کے دعویدار ندیم نامی شخص کی جانب سے اس کی مبینہ بیوی سے علیحدگی میں ملاقات کرانے کی درخواست بھی مسترد کر دی۔

مزید : علاقائی