زکریا یونیورسٹی کی بسیں رکشوں پر چڑھ دوڑیں ،طالبعلم جاں بحق ،6افراد زخمی

زکریا یونیورسٹی کی بسیں رکشوں پر چڑھ دوڑیں ،طالبعلم جاں بحق ،6افراد زخمی

ملتان(کرائم رپورٹر) بہا ء الدین زکریا یونیورسٹی کے بس ڈرائیور بے قابو دو مختلف حادثات میں بس کی ٹکر سے 14سالہ بچہ جاں بحق جبکہ 6افراد زخمی ہوگئے، ہوگیا۔مشتعل مظاہرین نے بس کو آگ لگا دی۔ڈرائیور فرار ہوگیا،پولیس نے بس ڈرائیور سمیت مظاہرین کے خلاف مقدمات درج کرلیے ہیں۔گزشتہ صبح 8.30بجے زکریا یونیورسٹی کی بوسن روڈ بائی پاس چوک پر پہنچی تیز رفتاری کے باعث بس بے قابو ہوگئی ،پہلے ساتھ سے گزرتے ہوئے ایک رکشہ ڈرائیور کو سائیڈ ماری ، جس سے وہ خوفزدہ ہوگیااور بس کی سپیڈ بڑھا دی اچانک اگے سے سائیکل سوار آگیا جسے وہ کچلتا ہوا دور تک لے گیا، جس سے بستی شورکوٹ نگانہ چوک کا رہائشی 14سالہ شہزاد صادق موقع پر جاں بحق ہوگیا۔حادثے کے بعد ڈرائیور اسلم موقع سے فرار ہوگیا،جبکہ وہاں موجود مشتعل مظاہرین نے بس کے شیشے توڑ دیے اور آگ لگا دی،جس سے بس مکمل طور پر جل کرخاکستر ہوگئی، بعدازاں ریسکیو فائر برگیڈ کی ٹیم موقع پر پہنچ گئی،اور آگ پر قابو پالیا،بعدازاں پولیس نے بچے کی لاش ورثا کے حوالے کردی،بچے کے والد صادق نے یونیورسٹی انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہر ہ کیا،اس موقع پرایس ایچ او بی زیڈ ملک راشدتھہیم کا کہنا تھا کہ ڈرائیور کے خلاف مقدمہ؂در ج کرلیا گیاہے ،اور اس کی تلاش جاری ہے۔دوسرا واقع قصوری چوک کے قریب پیش آیا جہاں بہا ء الدین زکریا یونیورسٹی کی بس کی ٹکر سے رکشہ ڈر ائیورکریم بخش سمیت 6افراد زخمی ہوگئے،جنھیں ریسکیو اہلکار وں نے نشتر ہسپتال منتقل کردیا۔پولیس تھانہ نیو ملتان نے بس تھانہ منتقل کردی بعدازاں دونوں فریقین کے درمیان صلح ہوگئی ،جس پر ان کے خلاف کاروائی نہ کی گئی۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...