سکولوں کی نجکاری کیخلاف پنجاب ٹیچرز یونین کا30اپریل کو احتجاج، دھرنے کااعلان

سکولوں کی نجکاری کیخلاف پنجاب ٹیچرز یونین کا30اپریل کو احتجاج، دھرنے کااعلان

قصبہ بصیرہ(نامہ نگار) پنجاب ٹیچر یونین مظفرگڑھ کے ضلعی صدر ملک امام دین (بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

نے سرکاری سکولوں کی نجکاری کے خلاف30اپریل کو ضلع بھر میں احتجاج کی کال دے دی ہے۔انہوں نے کہا کہ احتجاج کے دن ضلع بھر کے تمام سکول بند رہیں گے اور تمام اساتذہ اور معلمات ای ڈی او ایجوکیشن مظفرگڑھ کے دفتر کے سامنے احتجاجی دھرنا دیں گے۔قصبہ بصیرہ میں ملک امام دین نے لائحہ عمل دینے کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری سکولوں کی نجکاری لاکھوں اساتذہ اور ان کے اہل خانہ کے معاشی قتل کے مترادف ہے۔حاصل پور سے نمائندہ پاکستان کے مطابق حاصل پور پریس کلب کے سامنے ٹیچر یونین کی طرف سے پر امن احتجاج کیا گیا۔ جس میں مقررین نے سرکاری سکولوں کو پرائیویٹ نا کر نے کا مطالبہ کیا ہے اور سر کاری سکولوں کے اساتذہ کی تنخواہوں میں کمی کے خلاف بھی نعرے بازی کی ۔ ضلعی صدر ٹیچر یونین اللہ بخش تحصیل صدر نعیم باجوہ نے اپنے مطالبات حکومت وقت وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف، وزیر اعظم پاکستان کے سامنے رکھتے ہوئے کہا کہ سرکاری سکولوں کو پرائیویٹ نہ کیا جائے۔ ورنہ ہم اپنے احتجاج کا دائرہ کار پنجاب اسمبلی تک بڑ ھادیں گے۔ اور لاہور کی سڑکوں پر احتجاج کریں گے ۔ اس موقع پر احتجا ج میں شامل خواتین اور اساتذہ نے موجودہ حکمران میاں برارن کے خلاف نعرے بھی لگائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر