عوام کو پانامہ لیکس پر حکومت کا من پسند کمیشن قبول نہیں: سراج الحق

عوام کو پانامہ لیکس پر حکومت کا من پسند کمیشن قبول نہیں: سراج الحق

لاہور(آن لائن) جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ پاکستان کے عوام کو پانامہ لیکس کے حوالے سے حکومت کا من پسند کمیشن قبول نہیں اپوزیشن کسی بھی بنیاد پر تقسیم نہ ہو سیاست اور اپرٹیوں میں تقسیم ہونے کی بجائے سب مل کر کرپشن کے خلاف جدوجہد کریں جماعت اسلامی کی کرپشن فری پاکستان تحریک ملک کے 20کروڑ عوام کی آواز بن چکی ہے ہم عوام کے تعاون سے ملک سے کرپشن کا خاتمہ کریں گے ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ اس وقت ملک میں اخلاقی عدالتی اور انتخابی کرپشن ہے جس کی وجہ سے پاکستان کے20کروڑ عوام غربت کا شکار ہیں حکومتی پالیسیوں کے باعث غریب غریب سے غریب تر ہوتا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ انہوں نے کرپشن کے خلاف تحریک کا آغاز پشاور سے کیا جو جاری ہے اور اگر قوم نے ہمارا ساتھ دیا تو ہم قوم کے تعاون سے کرپشن کے سوغات پاش پاش کردیں گے سراج الحق نے کہا کہ پاکستان پر 18ہزار ارب سے زائد کا قرضہ ہے یہ قرضہ پاکستان کے غریب عوام کے لیے نہیں بلکہ اس ملک کے مٹھی بھر کرپٹ اشرافیہ کے لیے ہے حکمرانوں سمیت سب کا بلا امتیاز احتساب ہونا چاہیے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں چند خاندانوں نے جمہوریت اور ملک کے وسائل کو یرغمال بنارکھا ہے یہاں دوجماعتیں ہیں ایک ظالم اور دوسرا مظلوم مگر ہم مظلوم جماعت کے لوگوں کو ظالموں سے نجات دلائیں گے انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ کرپشن کے خلاف جماعت اسلامی کی تحریک کا ساتھ دیں انہوں نے مطالبہ کیا کہ ملک کی تمام سیاسی پارٹیوں کی مشاورت سے پانامہ لیکس انکوائری کمیشن بنایا جائے جو سب کا احتساب کرے۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...