خواتین سے بد سلوکی کرنیوالے ’’ ٹائیگر ز‘‘ہی تھے،خاتون کارکن کا عمران کو خط

خواتین سے بد سلوکی کرنیوالے ’’ ٹائیگر ز‘‘ہی تھے،خاتون کارکن کا عمران کو خط

اسلام آباد (اے این این) تحریک انصاف کے اسلام آباد کے جلسہ میں خواتین سے بدسلوکی پر پارٹی خواتین پھٹ پڑیں ، عظمی کاردار نے چیئرمین عمران خان کو خط لکھ دیا ، خواتین کا تحفظ نہیں کرسکتے تو نیا پاکستان کیسے بنائیں گے ، جس پر عمران خان نے نعیم الحق کی سربراہی میں چار رکنی تحقیقاتی کمیٹی بنادی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کا اسلام آباد میں یوم تاسیس کا جلسہ ہر طرف خواتین کو بد سلوکی کا نشانہ بنایا گیا جس پر پارٹی کی خواتین کارکنان اور رہنما بھی پھٹ پڑی ہیں اور پارٹی قائدین کے اس بہانے کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا جس میں کہا گیا تھا کہ بد سلوکی کرنے والے مسلم لیگ(ن) کے کارکنان تھے ۔تحریک انصاف کی خاتون رہنما عظمی کاردار نے عمران خان کے نام باقاعدہ خط لکھ ڈالا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ جلسے میں خواتین کے ساتھ بدسلوکی انتہائی افسوس ناک ہے ۔ خط میں یہ بھی کہہ دیا کہ بدسلوکی کرنے والے مسلم لیگ ن کے نہیں پی ٹی آئی کے کارکن تھے ۔ عظمی کاردار کا کہنا ہے اگر پارٹی اپنی خواتین کا تحفظ نہیں کرسکتے تو نیا پاکستان کیسے بنائیں گے اور کیا جلسے میں جو نقشہ پیش کیا گیا وہی نئے پاکستان کا نقشہ ہو گا۔ خواتین قیادت کا کہنا ہے کہ جلسے میں بدانتظامی کی ذمہ دار جلسہ انتظامیہ ہے ۔ خط میں کہا گیا تھا کہ 24 اپریل کو اسلام آباد کے ایف نائن پارک میں جلسے میں خواتین کے ساتھ بدتمیزی کے متعدد واقعات پیش آئے جس کی اصل وجہ ناقص انتظامات تھے۔ پی ٹی آئی کے جلسوں میں پہلے بھی خواتین کے ساتھ بد تمیزی کے واقعات پیش آتے رہے ہیں جس کی وجہ سے پارٹی کی ساکھ متاثرہورہی ہے، اس لیے ایسے واقعات کا سد باب کرنے کے لئے ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔خاتون رہنما کے شکایتی خط پر عمران خان 4 رکنی تحقیقاتی کمیٹی قائم کردی ہے، نعیم الحق کمیٹی کی سربراہی کریں گے جب کہ نفیسہ خٹک، کرنل ((ر)یونس علی رضا اور طلعت نقوی کمیٹی کے رکن ہوں گے، کمیٹی ویڈیو اور تصویری شواہد کا تفصیلی جائزہ لے گی اور ذمہ داروں کا تعین کرے گی اور 7روز میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔

مزید : صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...