پریس کانفرنس کی کیا ضرورت تھی ،پانامہ لیکس پروزیر اعظم نے خود اپنے آپکو مشکوک بنا دیا :یوسف رضا گیلانی

پریس کانفرنس کی کیا ضرورت تھی ،پانامہ لیکس پروزیر اعظم نے خود اپنے آپکو ...

ملتان( سٹاف رپورٹر)پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ حکومت نے مشرف کا نام ای سی ایل سے نکال کر میرا نام ڈال دیا‘ احتساب کے متعلق آرمی چیف کا بیان خوش آئند ہے‘پانامہ لیکس سکینڈل میں وزیر اعظم نواز شریف نے اپنے آپ کو خودہی مشکوک بنا دیا ہے‘ان کو کیا ضرورت تھی پریس کانفرنس کرنیکی؟ملتان آمد پر ائرپورٹ پر میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے ا نہوں نے کہا کہ اپوزیشن نے چیف جسٹس کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیشن بنانے کا مطالبہ کیا تھاجو وزیر اعظم نواز شریف نے مان لیا اور حکومت نے چیف جسٹس آف پاکستان کو اس سلسلے میں خط بھی لکھ دیا‘پھر اس پر زیادہ باتوں کی ضرورت نہیں تھی‘ مگر نواز شریف نے خوامخواہ پریس کانفرنس کرکے شکوک وشبہات پیدا کر دئیے ہیں‘یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ اگر میں وزیر اعظم ہوتا اور میرے خلاف پانامہ لیکس سکینڈل بنتا تومیں وہ فوری طور پر تمام پارلیمانی پارٹیوں کے لیڈرز کو بلاتا اور کہتا کہ بتائیں کیا کرنا ہے ‘آپ کیا چاہتے ہیں‘آپ جو کمیشن یا ٹی او آر بنا نا چاہتے ہیں بنائیں‘میں فوری اس کا اعلان کر دیتا ہوں ‘آپ جس طرح مطمئن ہوں ‘میں اس کے لئے تیار ہوں‘ایک سوال کے جواب میں سید یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ تحریک انصاف اگر سندھ میں جلسے جلوس نکالنا چاہتی ہے تو ضرور نکالے‘ شاہ محمود قریشی اگرسندھ جانا چاہتے ہیں توضرور جائیں ‘وہ کرپشن کیخلاف تحریک چلانا چاہتے ہیں تو چلائیں کیونکہ وہ پیپلز پارٹی کیخلاف نہیں بلکہ کرپشن کیخلاف تحریک چلانے جا رہے ہیں اور پیپلز پارٹی تو خود کرپشن کیخلاف ہے‘سید یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ مشرف کو ملک میں رکھنا ضروری تھا لیکن حکومت نے مشرف کا نام ای سی ایل سے نکال کر انہیں باہر بھجوا دیا اور اسی روز میرا نام خوامخواہ ای سی ایل میں ڈال دیا‘میرے خلاف 23مقدمات بنا دئیے گئے اور مزید بنانے کی تیاری ہے لیکن حکومت یاد رکھے کہ میرا دامن صاف ہے‘میں نے پہلے بھی جھوٹے مقدمات کا سامنا کیا ہے اور آئندہ بھی کروں گا‘سید یوسف رضا گیلانی نے کہا کہ جنرل راحیل شریف کابیان خوش آئند ہے کہ احتساب سب کا کیاجائے‘احتساب کی آڑ میں انتقامی کارروائی نہیں ہونی چاہئیے‘شفا ف احتساب ہونا چاہئیے جو سب کو نظر آئے‘ یہ نہیں کہ پسند نا پسند کی بنا پر کسی کا احتساب کیا جائے اور کسی کا نہ کیاجائے‘سید یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ لیہ میں زہریلی مٹھائی سے اتنی زیادہ تعداد میں ہلاکتیں ہو گئیں لیکن وزیر اعلیٰ شہباز شریف کو توفیق تک نہیں ہوئی کہ وہ لیہ آکر متاثرہ خاندان سے اظہار ہمدردی ہی کرلیں‘اگر یہ واقعہ لاہور میں ہوتا تو وہاں قیامت آگئی ہوتی ‘شہباز شریف دعوی ٰ کرتے ہیں کہ پنجاب میں علاج کی تمام سہولتیں دستیاب ہیں ‘میں کہتا ہوں کہ اگر لیہ کے ہسپتالوں میں ادویات ہوتیں تولیہ میں متاثرہ افراد کا علاج ہوجاتا اور قیمتی جانوں کا ضیاع نہ ہوتا‘سید یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ چھوٹو گینگ کے ہاتھوں پولیس افسروں و اہلکاروں کی شہادتوں پر متاثرہ خاندانوں سے ہمدردی ہے‘ڈاکوؤں کیخلاف آپریشن میں کامیابی پر پاک فوج‘پولیس سمیت تمام سکیورٹی ادارو ں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔

مزید : کراچی صفحہ اول