تحریک انصاف نے کرپشن کیخلاف سندھ سے مارچ شروع کر دیا

تحریک انصاف نے کرپشن کیخلاف سندھ سے مارچ شروع کر دیا
تحریک انصاف نے کرپشن کیخلاف سندھ سے مارچ شروع کر دیا

کراچی (آن لائن) تحریک انصاف نے کرپشن کیخلاف سندھ سے مارچ کا آغاز کردیا ہے۔ تحریک انصاف نے کرپشن مٹاﺅ، ملک بچاﺅ مارچ کیلئے خصوصی بس تیار کرلی۔ پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے کرپشن مٹاﺅ ، ملک بچاﺅ مارچ کا آغاز سندھ سے کیا گیا ہے۔ تحریک انصاف نے مرکزی قیادت کیلئے اس بار کنٹینر کے بجائے خصوصی بس تیار کی ہے۔ پارٹی کی اعلیٰ قیادت کی تصاویر سے مزین بس میں قائدین کے آرام کے لئے تمام سہولتیں مہیا کی گئی ہیں۔ مکمل طور پر ائرکنڈیشنڈ بس میں رہنماﺅں کے لئے صوفوں کا اہتمام بھی ہے جبکہ حالات حاضرہ سے باخبر رہنے کے لئے ٹی وی بھی موجود ہے۔ بس میں واش روم کے ساتھ میٹنگ روم کی سہولیات بھی دستیاب ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے ’کرپشن مٹاﺅ ملک بچاﺅ‘ نعرے کے تحت منگل سے سندھ سے اپنے مارچ کا آغاز کردیا ہے، جس کی قیادت تنظیم کے شاہ محمود قریشی کر رہے ہیں۔ یہ مارچ پانچ روز سندھ کے مختلف شہروں سے ہوتا ہوا، پنجاب کی حدود میں داخل ہوگا۔ شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں یہ مارچ ملیر، ٹھٹھہ، سجاول، بدین سے ہوتا ہوا رات کو عمرکوٹ پہنچے گا، دوسرے روزے میرپور خاص اور سانگھڑ سے ہوتا ہوا رات سکرنڈ میں گذارے گا۔ تیسرے روز نواب شاہ، نوشہرو فیروز سے گذر کر خیرپور پہنچے گا۔ چوتھے روز لاڑکانہ، شہداد کوٹ، شکارپور میں اجتماعات ہوں گے اور رات کو مارچ سکھر پہنچے گا، اگلے روز اس مارچ کی قیادت تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کریں گے جس کے بعد یہ مارچ گھوٹکی اور کشمور سے ہوتا ہوا رحیم یار سے پنجاب میں داخل ہوجائے گا۔ شاہ محمود قریشی نے کراچی ائرپورٹ پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ یہ مارچ 14 اضلاع کے چھوٹے بڑے قصبات سے گذرے گا، ان کا مقصد وہاں بڑے جلسے نہیں بلکہ اپنا پیغام پہنچانا ہے اور وہ پر امید ہیں کہ سندھ کرپشن کے خلاف اول دستہ ثابت ہوگا۔ شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ پنجاب بار کونسل کے ذمہ داروں نے بتایا ہے کہ اس ہفتے وہ ایک نمائندہ اجلاس بلا رہے ہیں، جس میں پانامہ لیکس اور کمیشن کے ٹرم آر ریفرنس پر وہ اپنا رد عمل دیں گے، یہ معاملہ صرف سیاسی نہیں یہ قانونی اور اخلاقی بھی ہے، اس میں سول سوسائٹی نے اپنا کردار ادا کرنا ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ پانامہ لیکس پر حکومت دکھاوے کا کمشن بنانا چاہتی ہے جبکہ اپوزیشن چاہتی ہے کہ حقائق سامنے آئیں اور دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو۔ حکومت کا 1956ءکے ایکٹ پر تجویز کردہ کمشن بننے سے پہلے ہی مرچکا ہے، حکومت دکھاوے کا کمشن بنانا چاہتی ہے ، اپوزیشن چاہتی ہے کہ حقائق سامنے آئیں اور دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو، ایسا کمشن بنایا جائے جو باریک بینی سے جائزہ لے کر حقائق عوام کے سامنے رکھے۔ احتساب کا نقطہ آغاز وزیراعظم کے خاندان سے ہونا چاہئیے۔ کک بیکس ، قرضے معاف کرانے والوں کا بھی احتساب ہونا چاہئے۔ علاوہ ازیں پی ٹی آئی کے رہنما عارف علوی نے کہا ہے کہ اسلام آباد سے احتجاج شروع کیا ہے۔ سندھ اور خیبر پی کے بھی جائیں گے۔ ہماری توجہ آف شور اکاﺅنٹس پر ہے کہ پیسہ کیسے باہر گیا۔ ہم چاہتے ہیں کہ پانامہ لیکس کے معاملے پر وزیراعظم کا نام کلین ہو جائے۔ پیپلزپارٹی میں بھی کرپٹ افراد ہیں۔ علاوہ ازیں پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان نعیم الحق نے کہا ہے کہ خواجہ سعد رفیق سے اتفاق کرتے ہیں کہ بے لاگ احتساب ہونا چاہئے مگر مک مکا کے ذریعے حکومتیں بانٹنے والوں کیلئے کسی کا احتساب کرنا ممکن نہیں۔ سعد رفیق کی گھٹیا بیان بازی کا واحد مقصد وزیراعظم اور ان کے خاندان کی لوٹ مار سے قوم کی توجہ ہٹانا ہے۔ چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی زیر صدارت اہم اجلاس بنی گالہ میں ہوا۔ مشاورتی اجلاس میں شریف برادران کی مبینہ کرپشن پر سخت مو¿قف میں لچک نہ دکھانے پر اتفاق کیا گیا۔ نواز شریف، مریم نواز اور قریبی رفقا کے کرپشن کیسز دوبارہ اٹھانے کی تیاری کرنے اور اصغر خان سمیت دیگر کیخلاف ازسرنو تحقیقات کے قانونی پہلوو¿ں پر غور کیا گیا۔ کپتان نے قانونی ماہرین کو کیسز دوبارہ اٹھانے کیلئے تیاری کی ہدایت کی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا پانامہ لیکس پر قائم کمیٹیوں کے اجلاس بلاناغہ منعقد کئے جائیں۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا لاہور میں چیئرنگ کراس پر اتوار کی شام 5 بجے جلسہ ہو گا جلسہ کی تشہیر کی ذمہ داری فیصل جاوید خان کو سونپی گئی۔ مزید براں عمران خان نے کل 28 اپریل کو لاہور میں اہم اجلاس طلب کر لیا۔ اجلاس میں پی ٹی آئی کے ارکان قومی و صوبائی اسمبلی شرکت کریں گے۔ عمران خان جمعرات کی دوپہر لاہور پہنچیں گے۔ اجلاس میں احتجاجی لائحہ عمل کے اگلے مراحل پر مشاورت کی جائے گی۔ احتجاجی حکمت عملی طے کرنے کے لئے پارٹی ٹاسک فورسز بنائی جائیں گی اور اتوار کے احتجاجی جلسہ کو حتمی شکل دی جائے گی۔

مزید : کراچی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...