کراچی آپریشن کا پہلے سے پتہ تھا ، 159افراد کے قتل میں ملوث رہا :عزیر بلوچ

کراچی آپریشن کا پہلے سے پتہ تھا ، 159افراد کے قتل میں ملوث رہا :عزیر بلوچ
کراچی آپریشن کا پہلے سے پتہ تھا ، 159افراد کے قتل میں ملوث رہا :عزیر بلوچ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) لیاری گینگ وار کے سرغنہ عزیر بلوچ نے 159افراد کے قتل سمیت مختلف وارداتوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کر لیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حساس اداروں کو دوران تفتیش عزیر بلوچ نے انکشاف کیا ہے کہ وہ159افراد کو قتل کرنے سمیت مختلف وارداتوں میں ملوث رہا ہے جبکہ کراچی آپریشن شروع ہونے سے پہلے اسے آپریشن کے بارے میں بتا دیا گیا تھا ۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ عزیر بلوچ نے اعتراف کرتے ہوئے بتایا ہے کہ اس نے یہ واراتیں ضلع ویسٹ ، سٹی اور ساﺅتھ میں کیں،عزیر بلوچ اپنے قریبی راشتے دار کے پاسپورٹ پر بیرون ملک فرار ہوا اورپاسپورٹ پر راشتے دار کی تصویر ہٹا کر اپنی تصویر لگائی ۔

ذرائع کے مطابق عزیر بلوچ نے انکشاف کیا ہے کہ کراچی آپریشن شروع ہونے سے پہلے ہی اسے آپریشن کا بتا دیا گیا تھا۔ فیصل پٹھان کو گینگ کی ذمہ داری سونپنے پر گینگ وار 2 دھڑوں میں تقسیم ہوئی تھی اس کے علاوہ سابق چیئرمین فشریز کو عزیر بلوچ کے کہنے پر لگایا گیا تھا۔

مزید : کراچی