اورنج لائن ٹرین منصوبہ: لاہور ہائیکورٹ نے حکومت سے چین کیساتھ معاہدوں کی تفصیلات طلب کر لیں

اورنج لائن ٹرین منصوبہ: لاہور ہائیکورٹ نے حکومت سے چین کیساتھ معاہدوں کی ...
اورنج لائن ٹرین منصوبہ: لاہور ہائیکورٹ نے حکومت سے چین کیساتھ معاہدوں کی تفصیلات طلب کر لیں

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ نےپنجاب  حکومت سے اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کے حوالے سے چین کیساتھ معاہدوں کی تفصیلات طلب کرلیں۔

نیو نیوز کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں اورنج لائن منصوبے کیخلاف کیس کی سماعت ہوئی جس میں عدالت نے صوبائی حکومت کو اگلی سماعت کے دوران چین کیساتھ ہونے والے معاہدوں کی تفصیلات پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت دو مئی تک ملتوی کر دی ۔

لاہور ہائیکورٹ کےجسٹس عابد عزیز شیخ کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی اور فریقین کے دلائل سننے کے بعد حکومت کو معاہدوں کی تفصیلات پیش کرنے کا حکم سنایا ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ حکومت نے منصوبے کیلئے چین سے بھاری شرائط پر قرضہ لیا ہے جبکہ منصوبے کیلئے جن کمپنیوں سے معاہدے کئے گئے ہیں ان میں بھی شفافیت اور میرٹ کو مد نظر نہیں رکھا گیا ۔ درخواست گزار کا کہنا تھا کہ حکومت نے کمپنیوں کو ذاتی پسند اور نہ پسند پر ٹھیکے دیے ہیں جو سرا سر غیر قانونی ہے ۔

درخواست میں اعتراض لگایا گیا تھا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے نیسپاک کو منصوبے کی فزیبلٹی رپورٹ تک تبدیل کرنے کا اختیار دے رکھا ہے جو حدود سے تجاوز کے زمرے میں آتاہے اس کے علاوہ کمپنی نے تاریخی عمارتوں کی خفاظت کیلئے حکومت کو تجویز دی تھی کہ منصوبے کا سا ت کلو میٹر کا روٹ زیر زمین بنایا جائے مگر حکومت نے اس پر بھی توجہ نہیں دی اور منصوبے کی وجہ سے متعدد تاریخی عمارتوں کو گرایا جا رہا ہے ۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...