گورنمنٹ سکول کا ہیڈ ماسٹر مدھر آواز پر ”ٹلی“ ہو گیا، اپنا ہی شاگرد ماموں بناتا رہا

گورنمنٹ سکول کا ہیڈ ماسٹر مدھر آواز پر ”ٹلی“ ہو گیا، اپنا ہی شاگرد ماموں ...
گورنمنٹ سکول کا ہیڈ ماسٹر مدھر آواز پر ”ٹلی“ ہو گیا، اپنا ہی شاگرد ماموں بناتا رہا

  

بھوانہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ادھار پیسے لینے کیلئے لڑکے نے لڑکی کا روپ دھار لیا اور اپنے ”شکار“ کے طور پر کسی اور کو نہیں بلکہ اپنے ہی سکول کے ہیڈ ماسٹر کو ماموں بناتا رہا۔ گورنمنٹ ہائی سکول نصرانہ کا طالب علم مزمل لڑکی بن کر گھنٹوں ہیڈ ماسٹر کے ساتھ فون پر پیار بھری باتیں کرتا رہا اور ہیڈ ماسٹر ان باتوں پر دل ہار بیٹھا تاہم وہ نہیں جانتا تھا کہ وہ جسے لڑکی سمجھ کر پیار بھری باتیں کر رہا ہے وہ کوئی اور نہیں بلکہ اس کے اپنے ہی سکول کا ایک شاگرد ہے۔

پولیس حراست میں موجود مزمل حسین نے دوران تفتیش بتایا کہ اس کا ہیڈ ماسٹر اکثر اسے لڑکیوں کے نمبر دیتا تھا اور کہتا تھا کہ انہیں ایزی لوڈ کروا دو، یہ دیکھ کر میں نے بھی ایزی لوڈ اور پیسے حاصل کرنے کیلئے لڑکی بن کر ہیڈ ماسٹر کے ساتھ باتیں کرنے کافیصلہ کیا اور اس میں کامیاب بھی ہو گیا جس کے بعد کئی بار پیسے اور ایزی لوڈ منگوایا۔

جب فون پر گھنٹوں باتیں کر کے دل کو قرار نہ آیا تو ہیڈ ماسٹر نے ملاقات کی خواہش کا اظہار کیا تاہم مزمل کا کہنا ہے کہ اس نے ملاقات سے انکار کیا جس پر ہیڈ ماسٹر نے خودکشی کرنے کی دھمکی دی۔ یہ دھمکی سن کر ہیڈ ماسٹر کے ساتھ ملنے کا پروگرام بنایا اور برقعہ پہن کر ملنے کیلئے چلا آیا تاہم جب گیٹ سے اندر جانے لگا تو چوکیدار نے روک کر شناخت کرانے کو کہا اور اسی دوران بھانڈا پھوٹ گیا۔ اصلیت سامنے آنے پر ہیڈ ماسٹر نے طالب علم مزمل کو پولیس کے حوالے کر دیا ہے جس نے دفعہ 420 اور 506 کے تحت پرچہ درج کر کے عدالت سے ریمانڈ حاصل کرنے کیلئے تھانے میں رکھا ہے۔

مزید : چنیوٹ