پی پی رہنماوں کی سپریم کورٹ بار کے عہدیداروں سے ملاقات، سب سے پہلے وزیراعظم کے خاندان سے متعلق تحقیقات ہونی چاہئیں: اعتزاز احسن

پی پی رہنماوں کی سپریم کورٹ بار کے عہدیداروں سے ملاقات، سب سے پہلے وزیراعظم ...

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پیپلز پارٹی کے رہنماوں سینیٹ میں قائد حزب اختلاف بیرسٹر اعتزاز احسن اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے سپریم کورٹ بار کے صدر اور دیگر رہنماوں سے ملاقات کی ہے جس میں پاناما لیکس کے معاملے پر مجوزہ جوڈیشل کمیشن کے ٹرمز آف ریفرنس پر مشاورت کی گئی ہے۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ پاناما لیکس کی اگلی قسط میں کسی کا بھی نام آئے پاناما پرہمارا موقف ایک ہی ہے کہ سب سے پہلے وزیراعظم کے خاندان سے متعلق تحقیقات ہونی چاہئیں۔ہم سمجھتے ہیں کہ سپریم کورٹ بار کسی ایک جماعت یا سوچ کی نمائندہ نہیں ہے بلکہ سپریم کورٹ بار کی باڈی عوامی سوچ رکھتی ہے، اطمینان ہے کہ سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن ملک وقوم کی خاطر سوچ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاناما لیکس کے معاملے پر مجوزہ جوڈیشل کمیشن کیلئے اپوزیشن اور سپریم کورٹ بار نے حکومت کے ٹی او آرکو مسترد کیا ہے جبکہ سپریم کورٹ بار نے اپنے طورپر بھی ٹی او آربنائے ہیں۔ملاقات میں اتفاق ہواکہ پانامالیکس جیسے معاملات کیلئے قانون سازی ہونی چاہیے اور انٹرنیشنل فرانزک آڈٹ کیلئے قانون سے متعلق سپریم کورٹ بار رہنمائی کرے گا۔

اس موقع پر خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ 2 مئی کواپوزیشن جماعتوں کا مشترکہ اجلاس ہوگاجس میں آئندہ کی حکمت عملی زیرغورآئے گی۔ سپریم کورٹ بار کے صدر علی ظفر کا کہنا تھا کہ پی پی رہنماوں سے ملاقات میں ہم نے جوڈیشل کمیشن کے ٹی او آر پر مشاورت کی ہے اور اس معاملے پر ٹی او آر پر مزید مشاورت بھی کریں گے۔

مزید : قومی /اہم خبریں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...