اقتصادی راہداری، کہیں ایسا نہ ہو کہ کل چین آ کر بیٹھ جائے اور ہماری آزادی چیلنج ہو: خورشید شاہ

اقتصادی راہداری، کہیں ایسا نہ ہو کہ کل چین آ کر بیٹھ جائے اور ہماری آزادی ...
اقتصادی راہداری، کہیں ایسا نہ ہو کہ کل چین آ کر بیٹھ جائے اور ہماری آزادی چیلنج ہو: خورشید شاہ

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ نے کہا ہے کہ پاکستان کی تاریخ میں 46 ارب ڈالر کا سب سے بڑا قرضہ لیا گیا جو ہمیں واپس کرنا ہے، کہیں ایسا نہ ہو کہ چین آ کر بیٹھ جائے اور ہماری آزادی چیلنج ہو۔ خورشید شاہ نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری کے مغربی روٹ کی تعمیر سے پہلے ہونی چاہئے کیونکہ اس کے ذریعے پورا پاکستان ہی مستفید ہو گا جبکہ مغربی روٹ کے بغیر راہداری کی کوئی افادیت نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ مغربی روٹ پر انڈسٹریل زونز انتہائی ضروری ہیں جو اب تک کہیں بھی نظر نہیں آ رہے، چین نے 46 ارب ڈالر قرضہ دیا ہے جسے ہمیں واپس کرنا ہے، یہ پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا قرضہ ہے، کہیں ایسا نہ ہو کہ کل چین آ کر بیٹھ جائے اور قرض واپسی کا تقاضا کرے اور ہماری آزادی چیلنج ہو۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...