سعودی عرب میں نیا قانون متعارف کروانے کی تیاری، تفصیلات جان کر سعودی عرب سے پاکستان رقوم بھیجنے والے شہریوں کی پریشانی کی حد نہ رہے گی

سعودی عرب میں نیا قانون متعارف کروانے کی تیاری، تفصیلات جان کر سعودی عرب سے ...
سعودی عرب میں نیا قانون متعارف کروانے کی تیاری، تفصیلات جان کر سعودی عرب سے پاکستان رقوم بھیجنے والے شہریوں کی پریشانی کی حد نہ رہے گی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) عرب ممالک میں کام کرنے والے غیرملکیوں کی طرف سے اپنے وطن بھیجی جانے والی رقم پر ٹیکس عائد کرنے کی تجاویز ایک عرصے سے سامنے آرہی تھیں، اور میڈیا رپورٹس کے مطابق اب اس ضمن میں عملی قدم اٹھانے کی تیاری شروع ہو گئی ہے۔

عرب نیوز نے مقامی میڈیا کے حوالے سے بتایا ہے کہ سعودی عرب کی شوریٰ کونسل متوقع طور پر اس اتوار کو اس موضوع کو زیر بحث لائے گی۔ اطلاعات کے مطابق شوریٰ کی فنانس کمیٹی کی طرف سے تجاویز مرتکب کردی گئیں ہیں جن میں سعودی عرب سے اپنے وطن رقم بھیجنے والے غیر ملکیوں پر نئے ٹیکس کے خدوخال بیان کئے گئے ہیں۔ عرب نیوز کے مطابق یہ تجاویز ایسے موقع پر سامنے آئی ہیں کہ جب خلیج تعاون کونسل کے تمام ممالک میں بیرون ملک بھیجی جانے والی رقوم پر ٹیکس عائد کرنے کی تجاویز پر بات ہورہی ہے۔

متحدہ عرب امارات میں ملازم کو تنخواہ نہ دینے پر کمپنی کو 17کروڑ روپے جرمانہ ، ملازمین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی

گلف ریسرچ سنٹر کی ایک رپورٹ کے مطابق تارکین وطن کی طرف سے اپنے ممالک کو بھیجی جانے والی دنیا کی کل رقوم کا اندازہ تقریباً 400 ارب ڈالر لگایا گیا ہے، جس میں سے تقریباً 90 ارب ڈالر خلیج تعاون کونسل کے ممالک سے دوسرے ملکوں کو بھیجے جاتے ہیں۔ ان ممالک میں یہ رائے زور پکڑرہی ہے کہ اتنی بڑی رقم پر ٹیکس لگا کر بھاری آمدنی حاصل ہوسکتی ہے، جو کہ خطے کے بدلتے ہوئے معاشی حالات کے پیش نظر ضروری قرار دی جا رہی ہے۔

مزید : عرب دنیا