ہائی کورٹ :سابق ایڈیشنل کمشنر ٹیکس محمد اقبال ناجائز اثاثہ جات کیس سے بری

ہائی کورٹ :سابق ایڈیشنل کمشنر ٹیکس محمد اقبال ناجائز اثاثہ جات کیس سے بری
ہائی کورٹ :سابق ایڈیشنل کمشنر ٹیکس محمد اقبال ناجائز اثاثہ جات کیس سے بری

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے سابق ایڈیشنل کمشنر ٹیکس محمد اقبال کو ناجائز اثاثہ جات بنانے کے کیس میں احتساب عدالت کی جانب سے سنائی گئی 10سال قید کی سزا کے فیصلے کو کالعدم قراردیتے ہوئے باعزت بری کردیا۔ جسٹس محمود مقبول باجوہ کی سربراہی میں قائم دورکنی بنچ نے محمد اقبال کو احتساب عدالت کی جانب سے دی گئی 10سال قید کی سزا کے خلاف دائراپیل کی سماعت کی۔درخواست گزار کے وکیل امجد پرویز نے موقف اختیارکیا کہ نیب نے 3 کروڑ کے ناجائز اثاثہ بنانے کا ریفرنس احتساب عدالت لاہورمیں دائر کیا۔ ریفرنس میں نیب اورپراسیکیویشن محمد اقبال کے ناجائز اثاثہ جات بنانے کے الزام کو ثابت نہ کرسکی۔ نامکمل شواہد اور پراسیکوایشن کے ناکافی دلائل کے باوجود احتساب عدالت نے2011ءمیں اقبال احمدکو10سال قید کی سزا سنائی ۔ انہوں نے عدالت سے استدعا کی کہ احتساب عدالت کی جانب سے سنائی گئی 10سال کی قید کے فیصلے کو کالعدم قراردیا جائے،نیب کے وکلاءنے بریت کے لئے دائراپیل کی مخالفت کرتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ احتساب عدالت نے میرٹ پر 10سال قید کی سزا سنائی جبکہ سرکاری وکلاءنے بھی بریت اپیل مسترد کرنے کی استدعا کی۔دورکنی بنچ نے فریقین کے وکلاءکے دلائل سننے کے بعد احتساب عدالت کے ملزم کو 10سال قید کی سزا دینے کے فیصلے کو کالعدم قراردیتے ہوئے محمد اقبال کو بری کرنے کا حکم دے دیا۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...