انصاف کی بروقت فراہمی، نوجوان سینئر وکلاءسے سیکھیں ، جسٹس شہباز رضوی

انصاف کی بروقت فراہمی، نوجوان سینئر وکلاءسے سیکھیں ، جسٹس شہباز رضوی

  

جام پور ( نامہ نگار ) بار اور کے تقدس کو برقرار رکھنے کے لیے ہمیشہ اہم کردار ادا کیا ہے۔نوجوان وکلائسینئرز وکلاءسے سیکھیں تاکہ سائیلین کے مسائل جودیشنری تک آسانی سے پہچا سکیں۔جام پور سمیت پورے ضلع سے مجھے ہمیشہ محبتیں ملی ہیں۔وکالت میں قانون سے ساتھ اخلاقیات کو پروان چڑھانا ہوگا تاکہ عوام کا اعتماد بحال ہو سکے۔وکلائاگر کامیاب ہونا چاہیں تو سب سے پہلے کتابوں سے (بقیہ نمبر45صفحہ7پر )

محبت کریں تاکہ علم سے معلومات فراہم ہوسکیں۔ان خیالات کا اظہار لاہور ہائی کورٹ کی جسٹس شہباز علی رضوی نے جام پور بار ایسوسی ایشن کے نو منتخب عہدیداران سے حلف وفاداری تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ڈسٹرکٹ سیشن جج محمد یار ولانہ نے کہا کہ پورے سسٹم کا مظلوم طبقہ کو علم کی دولت سے مالا مال کیا جائے جس سے معاشرے میں انتشار کی فضا کو ختم کیا جاسکتا ہے۔بار اور بنچ کے درمیان ہمیشہ بہتر روابط قائم رکھنا چاہیے۔صدر بار ملک اعجاز احمد راں ایڈووکیٹ۔شاہد سومر ایڈووکیٹ نے بھی خطاب کیا۔ایڈیشنل سیشن جج جام پور محمد رضوان عارف۔راو افتخار عالم۔سول ججز حاجی شیخ جہانگیر سلطان۔مہر بشیر احمد۔محمد مکی کے علاوہ ممبر پنجاب بار کونسل ملک مصطفی جونی۔خالد خان بزدار۔ملتان بار کی لائبریری میڈم کشمیر بی بی۔سابق صدر بار جام محمد ناصر برڑہ ایڈووکیٹ۔صدر بار ڈیرہ محمد یاسر خان کھوسہ۔طیب حکیم بخاری سیکٹری۔صدر راجن پور بار سجاوت حسین بخاری۔ملک اقبال ثاقب۔مہر حبیب سیال۔حافظ ملازم حسین۔ ملک منیر ثاقب۔ملک امیر محمد۔وسیم عباس ڈاہا۔حفیظ اللہ سنجرانی۔مہر محمد طارق جاوید۔محمد نعیم جٹ۔ملک عصمت اللہ لنگرانہ۔رانا محمد اسماعیل۔ملک انعام اللہ برار۔محمد اصغر دریشک۔میڈم ثروت سحر۔میڈم نزہت نواز ایڈووکیٹ کی علاوہ سینکڑوں وکلائ نے شرکت کی بعدازاں جسٹس شہباز علی رضوی نے نو منتخب عہدیداران سے حلف وفاداری بھی لیا۔

شہبازرضوی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -