شجاع آباد روڈ پر ،58ایکڑ اراضی مختص ،1ہزار بیڈز آج نشتر ٹو منصوبے کا افتتاح ،انتظامیہ الرٹ

شجاع آباد روڈ پر ،58ایکڑ اراضی مختص ،1ہزار بیڈز آج نشتر ٹو منصوبے کا افتتاح ...

  

ملتان(سپیشل رپورٹر،نیوز رپورٹر) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار آج27 اپریل کو ملتان میں صحت کے شعبے کے میگا پراجیکٹ نشتر ہسپتال ٹو کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ ایک ہزار بیڈز پر مشتمل نشتر ہسپتال ٹو کے اس منصوبے کے لیے شجاع آباد (بقیہ نمبر26صفحہ12پر )

روڈ پر موضع بلیل میں 58 ایکڑ اراضی مختص کی گئی ہے۔ میڈیکل کالج، پیرا میڈیکل کالج اور نرسنگ کالج کی تعمیر بھی اس میگا پراجیکٹ کا حصہ ہوں گے۔ یہ ہسپتال پاکستان کا سب سے جدید ترین ہسپتال ہو گااوراس کاایمرجنسی بلاک 120 بستروں پر مشتمل ہو گا۔ یہ موٹروے سے صرف ایک کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ نشتر ہسپتال ٹو کا منصوبہ اس وسیب کا دیرینہ مطالبہ تھا جو گزشتہ ایک عشرے سے چلا آ رہا تھا کیونکہ موجودہ نشتر ہسپتال پر اس کی استعداد سے زیادہ مریضوں کا بوجھ ہے جس کی وجہ سے عوام کو علاج معالجہ کے حصول میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ موجودہ نشتر ہسپتال جنوبی پنجاب کا سب سے بڑا ہسپتال ہے جو کہ نہ صرف اس خطے کے عوام بلکہ کے پی کے اور بلوچستان صوبہ کے ملحقہ اضلاع کی عوام کو بھی صحت کی سہولیات فراہم کرتا ہے۔ مریضوں کے رش کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ تین ماہ کے اعدادو شمار کے مطابق نشتر ہسپتال و میڈیکل یونیورسٹی ملتان کے آﺅٹ ڈور میں 4 لاکھ 73 ہزار 928 مریضوں کو علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کی گئیں جبکہ انڈورمیں ایک لاکھ 39 ہزار730 مریض داخل کئے گئے۔ اسی طرح ایمرجنسی میں 2 لاکھ31 ہزر مریض لائے گئے۔ ہسپتال میں تین ماہ کے دوران 7 ہزار 173 بڑے اور 2 ہزار 948 مائنر آپریشن کئے گئے جبکہ اس عرصے میں ایم آر آئی کے 1622، سی ٹی سکین 11 ہزار 360 ، ایکسرے 72 ہزار79، یوایس جی 28 ہزار832، لیبارٹری ٹیسٹس 6 لاکھ 38 ہزار959، ای سی جی 16 ہزار915 ، ای ٹی ٹی37، ایکو 1760 ، گیسٹرو سکوپی 529 ، ای آر سی پی کے 90 ٹیسٹ کئے گئے اور 7 ہزار 647 مریضوں کی ڈائیلسز کی گئی۔وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی 27اپریل بروز ہفتہ ملتان آمد متوقع ہے۔ وزیر اعلی پنجاب کے متوقع دورہ ملتان کے انتظامات کا جائزہ اجلاس سرکٹ ہاو¿س میں ڈپٹی کمشنر ملتان محمدعامر خٹک کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ضلعی انتظامیہ پولیس اور دیگر متعلقہ محکموں کے سربراہان نے شرکت کی۔ اجلاس میں ڈپٹی کمشنر ملتان نے تمام افسران کو ہدایت کی کہ وزیر اعلی پنجاب کی آمد کے حوالہ سے تمام انتظامات مکمل رکھے جائیں اور تمام افسران اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے انجام دیں اور کسی قسم کی کوتاہی یا غفلت سے گریز کیا جائے۔ انہوں نے ایم ایس نشتر ہسپتال کو ہدایت کی کہ وہ ہسپتال میں فارمیسی ،لیبارٹری سمیت دیگر سہولیات بارے عوام کی آگاہی کے لیے ہسپتال میں اشاراتی تختیاں نصب کرائیں اور ہسپتال کی عمارت کے داخلی راستے کے سامنے موجود پینے کے پانی کے کولر کو یا تو درست کرائیں یا وہاں سے ہٹوا دیں، اگر فنڈز کا کوئی مسئلہ ہے تو آگاہ کریں۔ انہوں نے ڈی ایف سی کو ہدایت کی کہ وہ گندم خریداری مراکز پر حکومتی ہدایات کے مطابق تمام انتظامات مکمل رکھیں۔ وزیر اعلی پنجاب اپنے دورہ ملتان کے دوران سدرن بائی پاس پر موضع بلیل میں نشترہسپتال ٹوکی عمارت کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد عوامی اجتماع سے خطاب کریں گے۔ جبکہچیف ایگزیکٹو آفیسر ڈسٹرکٹ کونسل ملتان اقبال فرید نے بچ ولاز کے بعد بنائی جانیوالی سٹرک میں غیر معیاری استعمال کا نوٹس لے لیا ہے اور ڈسٹرکٹ آفیسر آئی اینڈ ایس کو فوری طور پر انکوائری کرکے رپورٹ 2دن میں پیش کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔ شہری عمران نے چیف آفیسر ضلع کونسل کو دی جانیوالی درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ بچ ولاز کے بعد سٹرک کا ٹھیکہ ادریس رحمانی نامی ٹھیکہ دار کو دیا گیا ہے جس نے سٹرک کی تعمیر میں غیر معیاری میٹریل کا استعمال کیا، زمین میں موجود درختوں کو کاٹنے کے بجائے سٹرک تعمیر کردی، غیر معیاری سٹرک چند ماہ بعد ہی ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو کر رہ گءہے۔ چیف ایگزیکٹو آفیسر اقبال فرید نے ڈسٹرکٹ آفیسر آئی اینڈ ایس کو میٹریل کا لیب ٹیسٹ کرانے اور انکوائری کرکے 2دن میں رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ 

نشترٹو

مزید :

ملتان صفحہ آخر -